Saturday , October 20 2018
Home / دنیا / برمی فوجیوں نے روہنگیائی خواتین اور لڑکیوں کی

برمی فوجیوں نے روہنگیائی خواتین اور لڑکیوں کی

اجتماعی عصمت ریزی کی: ہیومن رائٹس واچ

اقوام متحدہ۔/16نومبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) ہیومن رائٹس واچ نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ میانمار کی فوج نے بے شمار روہنگیا خواتین اور لڑکیوں کی فوجی کارروائی کے دورن عصمت ریزی کی جس سے خوفزدہ ہوکر لاکھوں روہنگیامیانمار سے نقل مکانی کرتے ہوئے بنگلہ دیش فرار ہوگئے۔ امریکہ سے اپنی سرگرمی چلانے والے رائٹس گروپ نے اپنی ایک تازہ ترین رپورٹ میں یہ انکشاف کیا کہ روہنگیاؤں پر دیگر ظلم وجبر کے علاوہ اُن کی خواتین کی عصمت ریزی بھی شامل ہیں اور یہ تمام گھناونی حرکتیں میانمار کی فوج نے کی ہے جو انسانیت کو شرمسار کرنے کیلئے کافی ہیں۔ عصمت ریزی کی شکار خواتین سے انٹرویو کرنے کے بعد امدادی تنظیموں اور بنگلہ دیش کے ہیلتھ افسران نے مشترکہ رپورٹ تیار کی ہے جس میں اجتماعی عصمت ریزی کا تذکرہ بھی موجود ہے۔ روہنگیائی خواتین کو ڈرا دھمکا کر پکڑ لیا جاتا تھا اور ان میں جو خوبصورت اور جوان ہوتی تھی اُسے میانمار کے فوجی ایک مخصوص مقام پر لیجاکر اُن کی عصمت ریزی کرتے تھے۔ ہیومن رائٹس واچ کے ایک محقق اور رپورٹ تیار کرنے والے اسکائی وھیلر نے بتایا کہ ظلم و جبر کی لمبی فہرست میں عصمت ریزی سرفہرست ہے جہاں روتی بلکتی اور گڑگڑاتی ہوئی خواتین دوسرا کوئی عذر سنا نہیں جاتا تھا اور انہیں گھسیٹ کر عصمت ریزی کرنے کے مخصوص مقام تک لیجایا جاتا تھا۔ کئی معاملات ایسے بھی سامنے آئے ہیں جہاں روہنگیا خواتین کو ایک گروپ کی شکل میں کھڑا کیا جاتا تھا اور بعد ازاں انہیں زدوکوب کرکے ان کی عصمت ریزی کی جاتی تھی۔

TOPPOPULARRECENT