Wednesday , December 12 2018

بس ٹرین حادثہ کی اعلیٰ سطحی تحقیقات کا مطالبہ

خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی پر زور ، محمد علی شبیر ڈپٹی لیڈر تلنگانہ قانون ساز کونسل

خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی پر زور ، محمد علی شبیر ڈپٹی لیڈر تلنگانہ قانون ساز کونسل
حیدرآباد۔/24جولائی، ( سیاست نیوز) تلنگانہ قانون سازکونسل میں کانگریس کے ڈپٹی لیڈر جناب محمد علی شبیر نے میدک کے ماسائی پیٹ میں اسکول بس کے ٹرین کی زد میں آنے کے سانحہ پر گہرے دکھ کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہاکہ ریلوے حکام کی لاپرواہی کے نتیجہ میں 25سے زائد معصوم بچوں کی موت واقع ہوئی اور کئی خاندان اپنے کمسن نونہالوں سے محروم ہوگئے۔ انہوں نے دواخانہ پہنچ کر علاج کے انتظامات کا جائزہ لیا اور متاثرہ خاندانوں سے ملاقات کرتے ہوئے انہیں پُرسہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کی اعلیٰ سطحی تحقیقات کے ذریعہ خاطیوں کے خلاف سخت ترین کارروائی کی جانی چاہیئے تاکہ آئندہ اس طرح کی غفلت نہ برتی جائے۔ محمد علی شبیر نے کہا کہ تلنگانہ میں کئی ایسے مقامات ہیں جہاں آبادیوں کے درمیان سے ریلوے لائن گذرتی ہے لیکن ریلوے حکام کی جانب سے وہاں ریلوے گیٹ کا انتظام نہیں کیا گیا۔ اگر ایسے مقامات پر سگنل کی تنصیب اور ریلوے ملازمین کو تعینات کیا جاتا تو اس سانحہ سے بچا جاسکتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس علاقہ میں سابق میں بھی کئی حادثات رونما ہوئے جن میں انسانی جانوں کے علاوہ جانور بھی مارے گئے۔ مقامی حکام نے بارہا ریلوے حکام سے ریلوے کراسنگ کی تعمیر اور گیٹ نصب کرنے کیلئے نمائندگی کی لیکن عہدیداروں نے اس نمائندگی کو نظرانداز کردیا۔محمد علی شبیر نے اس طرح کے کھلی ریلوے کراسنگ پر گیٹ اور سگنل کی تنصیب کا کام جنگی خطوط پر انجام دیا جانا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کے سلسلہ میں مرکزی اور ریاستی حکومت علحدہ علحدہ طور پر تحقیقات کا اعلان کریں۔انہوں نے مہلوک طلبہ کے خاندانوں کو ایکس گریشیا کے علاوہ ہر خاندان میں ایک شخص کو ملازمت دینے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ تمام زخمیوں کا سرکاری خرچ پر علاج کرایا جائے اور زخمی طلبہ کے مستقبل کو تابناک اور محفوظ بنانے کیلئے حکومت بھاری رقم ان بچوں کے نام فکسڈ ڈپازٹ کردے۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کے متاثرین کو مرکزی حکومت سے امداد کے سلسلہ میں اے آئی سی سی کے ذریعہ نمائندگی کی کوشش کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT