Tuesday , November 13 2018
Home / Top Stories / بعض طاقتیں امن و ہم آہنگی کو درہم برہم کرنے کے درپے

بعض طاقتیں امن و ہم آہنگی کو درہم برہم کرنے کے درپے

اخوت و رواداری ہندوستان کا ڈی این اے ، اقلیتوں کی ترقی کیلئے حکومت کے اقدامات ، نقوی کا خطاب

نئی دہلی ۔ /4 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے آج دعویٰ کیا کہ چند طاقتیں ملک میں امن و ہم آہنگی بگاڑنا چاہتی ہیں اور انہوں نے ان (طاقتوں) کے ناپاک منصوبوں کو شکست دینے پر زور دیا ۔ نقوی نے دہلی بی جے پی مائیناریٹی مورچہ کے زیراہتمام منعقدہ ایک روزہ ورکشاپ کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ رواداری اور ہم آہنگی ہندوستان کا ڈی این اے ہے اور کسی کو بھی ملک کے اتحاد کو کمزور بنانے کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔ ایک بیان کے مطابق نقوی نے ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’بعض طاقتیں ملک میں امن و ہم آہنگی کو درہم برہم کرنے کے درپے ہیں ۔ اس قسم کے کسی بھی ناپاک منصوبہ کو ناکام بنانے کے لئے ہم سب کو متحد ہوجانا چاہئیے ‘‘ ۔ تاہم وزیر اقلیتی وزیر نے اس ضمن میں کسی فرد یا جماعت کا نام نہیں لیا ۔ انہوں نے کہا کہ ’’رواداری اور ہم آہنگی ہندوستان کے ڈی این اے میں ہیں ۔ ہمیں چاہئیے کہ کسی کو بھی اخوت و اتحاد کی ہندوستانی تہذیب کو کمزور بنانے کی اجازت نہ دی جائے ‘‘۔ سال 2018-19 ء کے بجٹ میں ان کی وزارت کیلئے مختص کی جانے والی رقم میں اضافہ کی ستائش کرتے ہوئے نقوی نے اقلیتی طبقات کو کسی خوشامد کے بغیر یا اختیار بنانے کے لئے مرکزی حکومت کی طرف سے کئے جانے والے فلاحی اقدامات کی ایک فہرست بیان کی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کسی کو محض خوش کرنے یا ان کی خوشامد کرنے کے بجائے انہیں (اقلیتوں کو) بااختیار بنانے کیلئے کام کررہی ہے ۔ نقوی نے بجٹ میں 505 کروڑ روپئے کے اضافہ کا حوالہ دیتے ہوئے اس سے حکومت کی ترجیحات کا ثبوت ملتا ہے ۔ اس وزارت کا بجٹ 2017-18 ء میں 4195 کروڑ روپئے تھا جو 2018-19 ء میں 4,700 کروڑ روپئے کردیا گیا ہے ۔ یہ اضافہ اقلیتوں کی موثر تعلیمی بااختیاری اور بالخصوص لڑکیوں کے تعلیمی پروگراموں کو روبعمل لانے میں معاون و مددگار ثابت ہوگی ۔ نقوی نے کہا کہ گزشتہ تین بسال کے دوران 2.42 کروڑ اقلیتی طلبہ کو مختلف اسکالر شپس فراہم کئے گئے ۔

TOPPOPULARRECENT