Saturday , September 22 2018
Home / ہندوستان / بغیر آدھار نیپالی طلباء کے مدرسہ بورڈ امتحان سے محرومی کا خدشہ

بغیر آدھار نیپالی طلباء کے مدرسہ بورڈ امتحان سے محرومی کا خدشہ

یوپی کے دینی مدارس میں پڑوسی ملک کے 1,000 زیرتعلیم طلباء پریشان
لکھنؤ۔ 6 فروری (سیاست ڈاٹ کام) اُترپردیش کے دینی مدارس میں زیرتعلیم پڑوسی ملک نیپال کے تقریباً 1,000 سے زائد طلباء ’’مدرسہ ایجوکیشن بورڈ‘‘ کے امتحانات لکھنے سے محروم ہوسکتے ہیں چونکہ حکومت نے امتحان لکھنے کیلئے آدھار کارڈ لازمی قرار دیا ہے۔ جبکہ ان نیپالی طالب علموں کے پاس آدھار کارڈ نہیں ہے۔ اس حوالے سے پریشان مدرسہ عربیہ ٹیچر اسوسی ایشنس نے اس مسئلہ کو مدرسہ سکھشا بورڈ کے سامنے پیش کرنے پر مجبور کردیا ہے۔ جنرل سیکریٹری مدارس عربیہ ٹیچرس اسوسی ایشن دیوان صاحب زماںخان نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ امتحانات کے فارمس داخل کئے جارہے ہیں اور اگر اس کے لئے آدھار کارڈ کے لزوم سے دستبرداری اختیار نہ کی گئی تو نیپال سے تعلق رکھنے والے ایک ہزار طلباء مولوی، عالم، منشی، فاضل، کامل کے امتحانات دینے سے محروم ہوجائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ جس وقت ان طلبہ کو داخلے دیئے جاتے ہیں، اس وقت ان کی شہریت اور تاریخ پیدائش سے متعلق کاغذات دیکھے جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فارم داخل کرنے کی آخری تاریخ مقرر کی گئی ہے اور بغیر آدھار کارڈ داخلے کئے، فارم قبول نہیں کئے جارہے ہیں جس سے ان ہزاروں طلباء کو پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اس مسئلہ پر بات کرتے ہوئے ڈپٹی چیف منسٹر دنیش شرما نے کہا کہ اس بارے میں مجھے تفصیلات معلوم نہیں ہے، تاہم اگر اس بارے میں کوئی معاملہ ہمارے سامنے پیش ہوتا ہے تو ہم قانون کے مطابق فیصلہ کریں گے کہ اس ضمن میں کیا کرنا چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT