Monday , December 18 2017
Home / ہندوستان / بغیر پٹاخے کے دیوالی کیسی ہوگی؟

بغیر پٹاخے کے دیوالی کیسی ہوگی؟

نئی دہلی، 18 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) کیا کل قومی دارالحکومت خطے میں دیوالی بغیر پٹاخے کی ہوگی اور لوگوں کو آلودگی سے مکمل طورراحت مل پائے گی۔ سپریم کورٹ کے گزشتہ دنوں پٹاخے کی فروخت پر روک لگانے سے پورے ملک میں یہ جاننے کے سلسلے میں تذبذب ہے کہ کیا راجدھانی دہلی اور اس سے متصل نوئیڈا، گڑگاؤں، غازی آباد اور فرید آباد میں اس بار دیوالی بغیر پٹاخے کی ہوگی اور صوتی آلودگی کے ساتھ ساتھ فضائی آلودگی بھی نہیں ہوگی۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کی وجہ سے قومی دارالحکومت خطے میں پہلے کی طرح آتش بازی کی دوکان کہیں کھلی دکھائی نہیں دے رہی ہے جبکہ کئی محلوں میں چوری چھپے پٹاخے بیچے جانے کے واقعات سامنے آئیے ہیں اور پولیس نے کئی مقامات پر چھاپے مار کر پٹاخے ضبط بھی کئے ہیں۔ عام طور پر دیوالی کے ایک ہفتے پہلے ہی ہر محلے میں پٹاخے کی دوکانیں لگ جاتی تھیں اور لوگ پٹاخے کی خرید و فروخت شروع ہو جاتی تھی۔ نوجوان طبقہ اور بچوں میں پٹاخے کے سلسلے میں جوش دکھائی دیتا تھا لیکن اس بار پٹاخے کی فروخت پر روک لگنے کی وجہ سے یہ جوش و خروش ٹھنڈا پڑ گیا ہے اور کئی لوگ مایوس بھی ہو گئے ہیں لیکن ساتھ ہی ساتھ زیادہ تر لوگوں کا کہنا ہے کہ پٹاخے کی فروخت پر روک سے اگر آلودگی ختم ہوتی ہے تو یہ خوشی کی بات ہو گی جو صحت کے لئے اچھی ہوگی ۔ دریں اثنا صنعتی تنظیم ایسوچیم کی ایک رپورٹ کے مطابق اس بار دیوالی میں تحائف کے لین دین میں بھی 30 سے 40 فیصد کمی آئی ہے ۔نوٹ کی منسوخی اور جی ایس ٹی کی وجہ تحائف کا کاروبار متاثر ہوا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT