Wednesday , January 24 2018
Home / شہر کی خبریں / بلاوقفہ برقی سربراہی سے طلبہ اور شہریوں کو راحت،اضلاع میں برقی کٹوتی سے دیہی عوام پریشان حال

بلاوقفہ برقی سربراہی سے طلبہ اور شہریوں کو راحت،اضلاع میں برقی کٹوتی سے دیہی عوام پریشان حال

حیدرآباد ۔ 17 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : امتحانات کی تیاریوں میں طلبہ کو دشواریوں کا سامنا نہ کرنا پڑے اس لیے بلا وقفہ برقی سربراہی کو یقینی بنائے جانے کے سبب شہریوں کو شدید گرمی سے کچھ حد تک راحت میسر آرہی ہے ۔ حکام نے گذشتہ ماہ کے دوران ہی شہری علاقوں میں روزانہ 4 گھنٹے معلنہ برقی کٹوتی کا اعلان کردیا تھا اور ہر سال موسم گرما کی آمد کے ساتھ ہی یہ اقدامات کا سلسلہ شروع ہوجایا کرتا تھا لیکن اس مرتبہ طلبہ کے امتحانات کے پیش نظر گزشتہ ماہ کے وسط میں ہی ٹرانسکو حکام کو اس بات کی ہدایات دے دی گئی تھیں کہ وہ امتحانات کے دوران بلا وقفہ برقی سربراہی کو یقینی بنانے کے اقدامات کریں اور محکمہ برقی کی جانب سے ان ہدایات پر کئے جارہے عمل کے سبب شہریوں کو بڑی حد تک راحت میسر آرہی ہے ۔ گذشتہ چند یوم سے دھوپ کی تمازت اور گرمی کی شدت میں ہوئے اضافہ کے سبب سڑکوں پر ٹریفک میں غیر معمولی کمی دیکھی جارہی ہے اور لوگ دھوپ کے اوقات میں گھر میں رہنے کو ترجیح دینے لگے ہیں ۔ فی الحال انٹر میڈیٹ کے امتحانات کا سلسلہ جاری ہے اور محکمہ برقی کی جانب سے بلا وقفہ برقی سربراہی کو یقینی بنائے جانے کے سبب کسی قسم کی شکایات موصول نہیں ہورہی ہیں اور عوام میں بھی اس بلا وقفہ برقی سربراہی کے نظم کے سبب کسی قسم کی بے چینی نہیں پائی جاتی ۔ برقی عہدیداروں کے بموجب گزشتہ ماہ موصولہ احکامات کے مطابق امتحانات کے دوران برقی سربراہی منقطع نہ کرنے اور بلا وقفہ برقی سربراہی کو یقینی بنانا ہے اور محکمہ برقی کی جانب سے حتی الامکان اس بات کی کوشش کی جارہی ہے کہ احکامات پر عمل آوری ہو ۔ علاوہ ازیں عہدیداروں نے بتایا کہ ان احکامات کے سبب ٹرانسکو پر کچھ اضافی بوجھ عائد ہورہا ہے لیکن اس بوجھ کو محکمہ برداشت کرنے کا کس حد تک متحمل ہے اس کا جائزہ لیا جارہا ہے ۔ عہدیداروں کے بموجب موسم گرما کے دوران بلا وقفہ برقی سربراہی کو یقینی بنانا انتہائی دشوار کن امر ہے لیکن طلبہ کے امتحانات کے پیش نظر ایسا کیا جارہا ہے ۔ ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے بموجب شہری علاقوں میں بلا وقفہ برقی سربراہی یقینی بنائی جارہی ہے جب کہ دیہی علاقوں میں برقی سربراہی کی صورتحال انتہائی دگرگوں ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ مختلف جماعتوں کے امتحانات کا سلسلہ آئندہ ماہ کے وسط تک جاری رہے گا اور آئندہ ماہ کے وسط تک بلا وقفہ برقی سربراہی کو یقینی بنانے کی کوششیں کی جارہی ہیں ۔ دونوں شہروں میں موسم گرما کے آغاز کے ساتھ ہی برقی کے استعمال میں جو اضافہ ریکارڈ کیا جاتا ہے اس کے پیش نظر پیداوار اور کھپت میں تفاوت پیدا ہوتا ہے اسی لیے پیداوار و کھپت کے درمیان توازن کی برقراری کے لیے برقی کٹوتی ناگزیر ہوجاتی ہے اور محکمہ برقی حکومت کی معاونت سے کٹوتی کا سخت گیر فیصلہ کرتا ہے لیکن ریاست میں فی الحال صدر راج نافذ ہے اور گورنر کی راست نگرانی میں ریاست کے امور انجام دئیے جارہے ہیں ۔ ان حالات میں جاری کردہ احکامات سے طلبہ اور شہریوں دونوں کو راحت حاصل ہوئی ہے ۔ دیہی علاقوں میں برقی سربراہی کے متعلق بتایا جاتا ہے کہ بیشتر اضلاع میں برقی سربراہی کی حالت انتہائی ابتر ہے اور بعض علاقوں میں تو 6 تا 8 گھنٹے برقی کٹوتی کی جارہی ہے جس سے دیہی عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT