Sunday , January 21 2018
Home / شہر کی خبریں / بلا وقفہ برقی سربراہی کیلئے جامع منصوبہ کی تیاری

بلا وقفہ برقی سربراہی کیلئے جامع منصوبہ کی تیاری

سرخ صندل کی اسمگلنگ روکنے پر زور ،جائزہ اجلاس سے چندرا بابو کا خطاب

سرخ صندل کی اسمگلنگ روکنے پر زور ،جائزہ اجلاس سے چندرا بابو کا خطاب
حیدرآباد یکم جولائی ( سیاست نیوز)چیف منسٹر ریاست آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابونائیڈو نے آندھرا پردیش میں گھریلو کمرشیل برقی صارفین کیلئے کسی خلل اندازی کے بغیر برقی سربراہی کو یقینی بنانے جامع منصوبہ مرتب کرنے کی عہدیداران برقی کو ضروری ہدایات دیں ۔ اور مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے واضح طور پر عہدیداروں کہا ہیکہ ریاست آندھرا پردیش کی ضروریات کی تکمیل کیلئے برقی فراہم کرنے مرکزی حکومت نے واضح تیقن دی ہے بلکہ من و عن ریاست آندھرا پردیش کے مطالبہ سے اتفاق بھی کی ہے ۔ چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے آج یہاں اپنے کیمپ آفس واقع لیک ویو گیسٹ ہاوز میں آندھرا پردیش میں برقی سربراہی اور سرخ صندل کی غیر مجاز منتقلی کا انسداد کے اقدامات و اختیار کی جانیو الی حکمت عملی پر متعلقہ عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس منعقد کیا۔ انہوں نے کہا کہ گھریلو و کمرشیل برقی صارفین کو 24 گھنٹے برقی سربراہی کو یقینی بنانے کیلئے حکومت آندھرا پردیش برقی کے عہدیداروں سے سنجیدگی کے ساتھ تبادلہ خیال کررہی ہے اور کہا کہ مرکزی وزری توانائی کی جانب سے بھی عہدیداروںکی ایک ٹیم آندھرا پردیش کا دورہ کر کے برقی ضروریات پر مرکز کو ایک جامعہ رپورٹ پیش کریں گے ۔ انہوںنے مزید کہا کہ ریاست آندھرا پردیش میں برقی شعبہ کی کارکردگی اور برقی سربراہی جیسے امور پر وہ اپنی خصوصی توجہ مرکوز کئے ہوئے ہیں تا کہ ریاست میں در پیش برقی سربراہی کی سنگین مسئلہ نمٹا جاسکے اور عوام کو برقی سربراہی کا مسئلہ در پیش نہ ہونے پائے ۔ اس موقع پر مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے برقی کے موضوع پر عہدیداروں سے تبادلہ خیال کرنے کے بعد آندھرا پردیش ریاست بالخصوص چتور کڑپہ وغیرہ جیسے مقامات پر سرخ صندل کی اسمگلنگ وغیر مجاز منتقلی کا مکمل انسداد کرنے کیلئے اقدامات کرنے کی متعلقہ عہدیداروں کو سخت ہدایات دیں۔ علاوہ ازیں محکمہ جنگلات کی کارکردگی مکمل تفصیلات پر مبنی وائیٹ پیپر مرتب کرکے حکومت کو پیش کرنے کی پرنسپال سکریٹری محکمہ جنگلات کو ہدایات دیں ۔ اس اجلاس میں ریاستی وزراء حکومت آندھرا پردیش مسرس وائی راما کرشنوڈو ،جی سرینواس راو،کشور بابو ،چیف سکریٹری حکومت آندھرا پردیش مسٹر آئی وائی آر کرشنا راو ، مسٹر کٹبما راو و دیگر اعلی عہدیدار بھی شریک تھے۔

TOPPOPULARRECENT