بلا وقفہ برقی سربراہی کے اعلانات کے باوجود غیر معلنہ کٹوتی

پرانے شہر کے علاقوں میں یومیہ چار گھنٹے کٹوتی کا سلسلہ جاری ۔ آئندہ ایام میں مزید مشکلات کا اندیشہ

پرانے شہر کے علاقوں میں یومیہ چار گھنٹے کٹوتی کا سلسلہ جاری ۔ آئندہ ایام میں مزید مشکلات کا اندیشہ
حیدرآباد ۔ 24 فبروری (سیاست نیوز) حکومت اور برقی سربراہ کرنے والی کمپنیوں کی جانب سے شہری علاقوں میں موسم گرما کے دوران بھی بلاوقفہ برقی سربراہ کرنے کے اعلانات کئے جارہے ہیں لیکن حقیقت اس کے برعکس ہے اور موسم گرما کے آغاز کے ساتھ ہی غیرمعلنہ برقی کٹوتی کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے اور پرانے شہر کے بیشتر علاقوں میں گذشتہ ایک ہفتہ میں روزانہ غیرمعلنہ 4 گھنٹے کی کٹوتی کی جانے لگی ہے۔ پرانے شہر کے علاقوں کشن باغ، وٹے پلی، فلک نما، انجن باؤلی، مصری گنج، حسن نگر، کالا پتھر، تاڑبن، شاہ علی بنڈہ، عیدی بازار، یاقوت پورہ، تالاب کٹہ، حافظ بابا نگر، چندرائن گٹہ و دیگر علاقوں میں دوپہر اور رات دیر گئے برقی سربراہی منقطع ہونے کے سبب عوام کو شدید تکالیف کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ موسم گرما کے ابتدائی ایام میں محکمہ برقی کی جانب سے غیرمعلنہ برقی کٹوتی کے آغاز سے عوام میں شدید برہمی پائی جاتی ہے۔ حکومت کی جانب سے شہری علاقوں میں بلاوقفہ اور معیاری برقی کی فراہمی کے منصوبہ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے عوام یہ کہہ رہے ہیں کہ جب حکومت اور برقی سربراہ کرنے والی کمپنیاں موسم سرما میں معیاری برقی بلاوقفہ سربراہ کرنے سے قاصر رہی ہیں تو موسم گرما میں کیسے توقع کی جائے کہ حکومت کی جانب سے شہریوں کو دیئے جانے والے تیقنات کو عملی جامہ پہنانے کیلئے یہ ضروری ہیکہ حکومت محکمہ برقی کے عہدیداروں کو اس بات کی خصوصی ہدایات جاری کرے کہ وہ بلاوقفہ برقی سربراہی کو یقینی بنانے کے اقدامات کرتے ہوئے حکومت کے اعلان کو قابل عمل بنائیں۔ گھروں میں موجود برقی میٹرس کو باہر لگانے کیلئے محکمہ برقی کی جانب سے چلائی جانے والی مہم پر بھی ان علاقوں کے عوام شدید ناراضگی کا اظہار کررہے ہیں اور یہ کہہ رہے ہیں کہ حکومت نے برقی چوری کے سدباب کے نام پر مخصوص علاقوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے اور بعض متعصب عہدیدار اس عمل میں سرگرم ہیں۔ اس طرح کے واقعات کو روکنے اور پرانے شہر کے علاقوں میں بھی معیاری و بلاوقفہ برقی سربراہی کو یقینی بنانے کے اقدامات کئے جانے چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT