Sunday , June 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / بلدیہ بودھن کیلئے 18.36 کروڑ روپئے کا بجٹ منظوبر

بلدیہ بودھن کیلئے 18.36 کروڑ روپئے کا بجٹ منظوبر

بودھن /18 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) صدرنشین بلدیہ بودھن مسٹر اے ایلیا کی صدارت میں آج سال 2015-16 فکے سالانہ بجٹ اجلاس کا انعقاد عمل میں آیا ۔ کمشنر بلدیہ مسٹر پرساد راؤ کی طرف سے پیش کئے گئے تخمینہ بجٹ 18 کروڑ 36 لاکھ 39 ہزار روپیوں پر مبنی اخراجات کو معمولی مباحث کے بعد منظوری دے دی گئی ۔ اس بجٹ میں راجیو نگر باٹا اسکیم کی رقم کو بلدی انتخ

بودھن /18 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) صدرنشین بلدیہ بودھن مسٹر اے ایلیا کی صدارت میں آج سال 2015-16 فکے سالانہ بجٹ اجلاس کا انعقاد عمل میں آیا ۔ کمشنر بلدیہ مسٹر پرساد راؤ کی طرف سے پیش کئے گئے تخمینہ بجٹ 18 کروڑ 36 لاکھ 39 ہزار روپیوں پر مبنی اخراجات کو معمولی مباحث کے بعد منظوری دے دی گئی ۔ اس بجٹ میں راجیو نگر باٹا اسکیم کی رقم کو بلدی انتخابات کیلئے استعمال کئے جانے پر ارکان بلدیہ نے اعتراض کیا اور اس اسکیم کی رقم کی بھرپائی کیلئے بلدیہ کی جانب سے کئے جارہے اقدامات سے کونسل کو واقف کروانے کا ارکان بلدے سے مطالبہ کیا ۔ کمشنر پرساد راؤ نے بتایا کہ آنجہانی چیف منسٹر وائی ایس راج شیکھر کے دور حکومت میں بلدیہ بودھن کو راجیو نگر باٹا اسکیم کے تحت 17 لاکھ تیس ہزار رقمی منطوری حاصل ہوئی تھی لیکن اس رقم کے استعمال کے تعلق سے گائیڈلائینس کی عدم اجرائی کے باعث یہ رقم بلدیہ کے کھاتے میں جمع تھی ۔ کمشنر نے کہا مذکورہ رقم حکومت کی اجازت پر ہی استعمال کی گئی بعد ازاں اسکی بھرپائی کردی جائے گی ۔ نائب صدرنشین بلدیہ حبیب خان قدیر نے مذکورہ رقم ایک مخصوص عہدیدار کے نام پر جاری کئے جانے پر شک و شبہات کا اظہار کرتے ہوئے کونسل میں کمشنر بلدیہ سے حساب کتاب طلب کئے ۔ کمشنر نے آئندہ میٹنگ سے قبل نائب صدرنشین کو حسابات بتانے کا تیقن دیا ۔ کانگریس پارٹی کے فلور لیڈر عابد سیٹھ اور سید رفیع الدین رفاعی نے بتایا کہ بلدے کو کسی مخصوص کاموں کی انجام دہی کیلئے فراہم کردہ رقم کا دوسرے کاموں پر خرچ کرنا غلط ہے ۔ سید رفیع الدین نے انکشاف کیا کہ سال 2004 کے دوران سابق کمشنر بلدیہ بودھن مسٹر لکشما ریڈی اس طرح اپنی من مانی چلانے پر حکومت نے انہیں ملازمت سے معطل کردیا تھا ۔ جناب عابد سیٹھ نے رمیش ٹاکس کی اجرائی کے دستاویزات کی تاحال عدم فراہمی پر اپنی برہمی کا اظہار کیا ۔ نومنتخب بلدیہ بودھن کے پہلے اجلاس میں رمیش ٹاکس کی اراضی کے دستاویزات پیش کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا ۔ لیکن تاحال بلڈنگ انسپکٹر مسٹر بھوپتی نے اپنے کسی رد عمل کا اظہار نہیں کیا ۔ چیرمین بلدیہ نے مداخلت کرتے ہوئے کہا کہ سال 1954-55 کے دوران قائم کی گئی بلدیہ بودھن کی 360 ایکر اراضی موجود تھی لیکن حکومت کی اجازت سے یہ اراضیات مستحق افراد کو رعایتی داموں فروخت کی گئی ۔ اس طرح بعض مقامات پر ابھی سرکاری اراضیات موجود ہے ۔ اس میں سے یہ رمیش ٹاکس کی اراضی بھی شامل ہے ۔ اطہر احمد نے سلمس علاقوں کو خصوصی فنڈس کی اجرائی کے بعد جنرل فنڈ سے ترقیاتی فنڈز کی عدم اجرائی پر اعتراض کیا ۔ رکن بلدیہ راما راجو کے سوال کے جواب میں انجینئیر واسودیو ریڈی نے بودھن شہر میں جملہ نلوں کی تعداد 9840 بتائی بجٹ اجلاس کے ساتھ ہی ماہ فروری کے ماہانہ اجلاس کا بھی انعقاد عمل میں آیا ۔ اس اجلاس کے ایجنڈے میں شامل نام منتقل اور اونر شپ کی فیس میں بھی الترتب پانچ سو سے ایک ہزار اور 300 کو پانچ سو کردینے کی کونسل نے منظوری دی ۔ آج کے اجلاس میں اعجاز خان ، ویرا سوامی ، دامودھر ریڈی ، شبہانہ بیگم ، راشد و دیگر نے مباحث میں حصہ لیا ۔

TOPPOPULARRECENT