Monday , September 24 2018
Home / شہر کی خبریں / بلدیہ کے انفورسمنٹ اسکواڈ نے اپارٹمنٹ کے اسٹور روم اور جھونپڑی کو منہدم کردیا

بلدیہ کے انفورسمنٹ اسکواڈ نے اپارٹمنٹ کے اسٹور روم اور جھونپڑی کو منہدم کردیا

حیدرآباد /10 ڈسمبر ۔ ( سیاست نیوز) باغ عنبرپیٹ ڈی ڈی کالونی میں واقع ( جیلانی میڈاوس (Jeelani Meadaus) پانچ منزلہ اپارٹمنٹ کے گراؤنڈ فلور پر واقع تعمیر شدہ اسٹور روم اور ایک جھونپڑی کو مجلس بلدیہ کے انفورسمنٹ اسکواڈ کے عہدیداروں نے منہدم کردیا ۔ جس کی وجہ سے مذکورہ اپارٹمنٹ کا غریب واچ مین اور اس کے افراد خاندان بے سہارا ہوگئے ۔ انفورسمنٹ عہد

حیدرآباد /10 ڈسمبر ۔ ( سیاست نیوز) باغ عنبرپیٹ ڈی ڈی کالونی میں واقع ( جیلانی میڈاوس (Jeelani Meadaus) پانچ منزلہ اپارٹمنٹ کے گراؤنڈ فلور پر واقع تعمیر شدہ اسٹور روم اور ایک جھونپڑی کو مجلس بلدیہ کے انفورسمنٹ اسکواڈ کے عہدیداروں نے منہدم کردیا ۔ جس کی وجہ سے مذکورہ اپارٹمنٹ کا غریب واچ مین اور اس کے افراد خاندان بے سہارا ہوگئے ۔ انفورسمنٹ عہدیداروں نے اس تعمیر کو غیر قانونی قرار دیا اور اسی اپارٹمنٹ میں بعض شرپسند عناصر بشمول ایڈوکیٹ ان کی بیوی سی پی ای ایم قائد ان کی بیوی اور دیگر کی مبینہ ایماء کے باعث مسلسل جھوٹی شکایات کے سبب اس انہدامی کارروائی کو انجام دیا ۔ جس کی وجہ سے مقامی افراد میں بے چینی پیدا ہوگئی اور ان شرپسند عناصر و مجلس بلدیہ کے عہدیداروں کے خلاف شدید ردعمل ظاہر کیا ۔ کیونکہ مذکورہ اپارٹمنٹ کے مالکین اور بلڈر کے پاس کورٹ سے 4 ڈسمبر کو جاری کیا گیا (Status-Quo) موجود ہے ۔ اس کے باوجود مجلس بلدیہ کے عہدیداروں نے اسے بھی نظر انداز کردیا اور Status Quo رہنے کے باوجود یہ انہدامی کارروائی کرتے ہوئے عدلیہ کی توہین کی،

تناہی نہیں مذکورہ اپارٹمنٹ کے مالکین یحییٰ خان عرف ربانی اور سید صمدانی کو مبینہ طور پر جھوٹے مقدمات میں ماخوذ کرکے جیل بھیج دیا گیا ۔ اسسٹنٹ کمشنر آف پولیس ملک پیٹ ڈیویژن سی ایچ سدھاکر نے مبینہ طور پر یکطرفہ کارروائی کرتے ہوئے مذکورہ اپارٹمنٹ میں مقیم ایڈوکیٹس سی پی ایم قائد اور اس کی بیوی کے زور دینے پر تعصبانہ کارروائی کو انجام دیا اور ان دونوں بھائیوں کے خلاف 354، 506 ، 509 اور 354B کے تحت مقدمات درج رجسٹر کرکے جیل بھیج دیا ۔ کیونکہ ایڈوکیٹ اور سی پی آئی ایم قائد کی بیویاں اور دوسرے خواتین نے ربانی اور صمدانی پر الزامات عائد کئے ہیںکہ ان دونوں نے مبینہ طور پر خواتین کے ساتھ بدسلوکی اور ہاتھا پائی کی جس کی وجہ سے عنبرپیٹ پولیس نے یہ کارروائی کی ۔ اتنا ہی نہیں ان خواتین نے منصوبہ بند طریقہ سے رات دیر گئے تک عنبرپیٹ پولیس اسٹیشن پر دھرنا بھی منظم کیا تھا ۔ مذکورہ اپارٹمنٹ کی تعمیر 5 سال قبل ہوئی اور گراؤنڈ فلور پر گذشتہ 3 سال سے اسٹور روم کی تعمیر تھی ۔

TOPPOPULARRECENT