Saturday , November 18 2017
Home / سیاسیات / بلدی مسائل پر لیفٹننٹ گورنر سے رجوع ہونا چاہئے

بلدی مسائل پر لیفٹننٹ گورنر سے رجوع ہونا چاہئے

دہلی ہائیکورٹ فیصلہ کے تناظر میں عام آدمی پارٹی کا طنز
نئی دہلی ، 5 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) عام آدمی پارٹی نے آج کہا کہ قومی دارالحکومت کے عوام اگر بلدی سہولیات کے تعلق سے کوئی مسئلہ درپیش ہو تو لیفٹننٹ گورنر سے رجوع ہوسکتے ہیں کیونکہ اختیارات اب اُن کو سونپ دیئے گئے ہیں ۔ پارٹی نے نجیب جنگ پر تنقید بھی کی کہ وہ سی این جی اسکام، ڈی ڈی سی اے کیس اور ریلائنس کے خلاف درج ایف آئی آر کے بارے میں مبینہ بے عملی برت رہے ہیں۔ عام آدمی پارٹی لیڈر اشوتوش نے کہاؤ ’’عوام سے میری اپیل ہے کہ آج سے اگر انھیں برقی اور پانی سے متعلق کوئی بلدی سہولت کا مسئلہ درپیش ہو تو انھیں لیفٹننٹ گورنر (ایل جی) سے رجوع ہونا چاہئے کیونکہ ہائیکورٹ فیصلہ کے بعد اب تمام اختیارات اُن کے پاس ہیں۔ ہمیں توقع ہے کہ تمام کام جو حکومت دہلی عوامی بہبود کیلئے کررہی ہے اور کرپشن کے خلاف ہماری لڑائی کو اب ایل جی اسی عزم اور دیانت داری سے آگے بڑھائیں گے جس طرح یہ حکومت کام کررہی ہے۔‘‘ اس بات پر زور دیتے ہوئے پارٹی کو ہائیکورٹ کے فیصلہ سے انکساری کے ساتھ اختلاف ہے، اشوتوش نے سوال اٹھایا کہ اس طرح کی صورتحال میں چیف منسٹر، اُن کی کابینہ اور منتخب نمائندوں کا رول کیا رہے گا۔ ’’ہمیں امید ہے سپریم کورٹ میں اسی طرح انصاف ملے گا جس طرح اس نے اروناچل پردیش کے معاملے میں (کانگریس حکومت کی بازماموری کے ذریعے) دیا ہے۔‘‘ اشوتوش نے نجیب جنگ کو ’’اسکامس اور خاطیوں کا سرپرست‘‘ قرار دیتے ہوئے استفسار کیا کہ کتنی مرتبہ وزیر فینانس ارون جیٹلی کو دہلی ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) میں مبینہ بے قاعدگیوں کے سلسلے میں طلب کیا گیا۔ ہمیں یہ بھی توقع ہے کہ ایل جی دہلی کے الیکٹریسٹی ڈسکامس کے خلاف کارروائی کریں گے۔ انھیں وضاحت کرنا چاہئے کہ ان تمام قانون سازیوں کے تعلق سے وہ کیا منصوبے رکھتے ہیں جو دہلی اسمبلی نے عوام کے فائدہ کیلئے منظور کئے ، جنھیں مرکزی وزارت داخلہ نے روک رکھا ہے۔

TOPPOPULARRECENT