Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / بلدی ملازمین کے ساتھ نا انصافیوں کا سلسلہ جاری

بلدی ملازمین کے ساتھ نا انصافیوں کا سلسلہ جاری

کم تنخواہوں پر کام لیا جارہا ہے ، رکن اسمبلی ایل بی نگر آر کرشنا کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 27 ۔ ستمبر : ( سیاست نیوز ) : جی ایچ ایم سی سورچ آٹو پیٹرس جوائنٹ ایکشن کمیٹی حیدرآباد تلنگانہ کے قائدین اور رکن اسمبلی ایل بی نگر مسٹر آر کرشنا نے مشترکہ طور پر آج پریس کلب سوماجی گوڑہ میں پریس کانفرنس منعقد کی ۔ مسٹر آر کرشنا نے کہا کہ حکومت تمام طبقات کو پروان چڑھانے کے نت نئے منصوبے بنا رہی ہے لیکن اس کی کوئی عمل آوری نہیں ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ چیف منسٹر جو اپنے بیٹے کے ٹی آر کو وزیر بلدی نظم و نسق کا عہدہ حوالے کئے ہیں ۔ ان سے اس بات کی مانگ کی جاتی ہے کہ گریٹر حیدرآباد میں محکمہ بلدیہ کے تحت کام کرنے والے ملازمین کے ساتھ نا انصافیوں کا معاملہ روا رکھا جارہا ہے ۔ جب کہ ان ملازمین میں اکثریت تعلیم یافتہ اور کمپیوٹرس کے ماہرین کی ہے ۔ اس کے باوجود بلدیہ کے محکمہ سے وابستہ ہوئے کم تنخواہوں پر کام کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت بلدیہ کے ان عارضی ملازمین کو مستقل کرنے کے بجائے ٹال مٹول کی پالیسی سے وہ بڑے پریشان ہیں ۔ ان ملازمین کے لیے ڈبل بیڈ روم اور ہیلت کارڈس کی اجرائی عمل میں لائی جائے ۔ انہوں نے بتایا کہ کئی ملازمین جو روزانہ کی اجرت پر بلدیہ میں کام کررہے ہیں جنہیں کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ دونوں شہر حیدرآباد و سکندرآباد میں کچرے کی نکاسی کے لیے 2500 سے زائد گاڑیاں ہیں ان ڈرائیورس کا مطالبہ ہے کہ انہیں بلدیہ میں مستقل کیا جائے ۔ یل راجو صدر نشین کمیٹی ، اے آنند کنوینر ، نائب صدر نشین ، ویرشم ، ویرا سوامی ، ارجن اور دوسروں نے بتایا کہ ان بلدیہ کے عارضی ملازمین میں بھی بڑی تعداد میں تعلیم یافتہ ملازمین جو صفائی و ستھرائی کے کام پر لگے ہوئے ہیں انہیں تنخواہیں مستقل کرتے ہوئے دیا جانا چاہئے ۔ اس موقع پر ویرا سوامی ، ارجن ، کونڈال ، کونیش نائک ، ٹی ملیا ، سرینواس اور دوسرے موجود تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT