Tuesday , December 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / بلدی کارپوریشن کیلئے 100کروڑ فنڈز کی عنقریب اجرائی

بلدی کارپوریشن کیلئے 100کروڑ فنڈز کی عنقریب اجرائی

: دیپاولی تک کریم نگر شہر ایل ای ڈی لائیٹس سے چمکے گا :

ترقیاتی کاموں کے جائزہ اجلاس میں کے ٹی آر کا اظہار خیال

کریم نگر۔/11اکٹوبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) دیپاولی کے تہوار تک شہر کے تمام ڈیویژن میں ایل ای ڈی بلب کی تنصیب کی جائے۔ اسٹریٹ لائٹس کی تبدیلی میں سرعت پیدا کی جائے۔ ان خیالات کا اظہار ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق و آئی ٹی کے ٹی راما راو نے کریم نگر میں روبہ عمل لائے جانے والے ترقیاتی کاموں کے جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر کریم نگر کلکٹر سرفراز احمد، وزیر سیول سپلائیز ایٹالہ راجندر، ایم پی ونود کمار، رکن اسمبلی گنگولا کملاکر، ایم ایل سی نارا داس لکشمن کمار کے علاوہ دیگر موجود تھے۔ کے ٹی آر نے کہا کہ کارپوریشن کو ترقیاتی اقدامات کیلئے سالانہ ایک سو کروڑ روپئے مختص کررہی ہے اس کے تحت کریم نگر کو پہلے مرحلے میں مالی سال2016-17 کیلئے 100کروڑ کی منظوری عمل میں آئی۔ مالی سال 2016-17 کیلئے عنقریب 100کروڑ روپئے کی اجرائی عمل میں لائی جائے گی۔ وزیر موصوف نے کہا کہ کانگریس دور اقتدار میں برباد شدہ کریم نگر شہر کو انتہائی خوبصورت بنایا جائے گا۔ ترقیاتی و تعمیراتی کاموں کی عمل آوری کیلئے چیف منسٹر نے فوری اقدامات کئے جانے کی ہدایت دی۔ چیف منسٹر کی خصوصی توجہ دہانی اور ایم ایل اے، ایم پی کی کاوشوں سے شہر کو اسمارٹ سٹی میں شامل ہونے کا موقع ملا ہے۔اندرون ایک سال کریم نگر میں آئی ٹی ٹاور قائم کیا جائے گا جس سے بیروزگار نوجوانوں کو روزگار کے مواقع دستیاب ہوں گے۔ میونسپل کارپوریشن میں بہتر سہولتوں کی فراہمی کے ساتھ ملازمتوں کی فراہمی میں آسانی و اضافہ ہوگا۔ کے ٹی آر نے کہا کہ ڈی پی ایم ایس کے طریقہ کار پر ذمہ دارانہ عمل ہونا چاہیئے، ڈیویژن واری ایریا کمیٹیوں کی تشکیل دی جائے۔ ان میں 10تا15 افراد کو شامل کیا جانا چاہیئے۔ انہیں تربیت دی جاکر ترقیاتی کاموں میں مدد کرنے کے قابل بنایا جائے۔ شہر میں خشک اور تر کچرے کو علحدہ علحدہ کرتے ہوئے اسے ڈنپ کیا جائیگا۔ مشن بھگیرتا میں تیزی لانے کی عہدیداروں کو ہدایت دی۔ آر اینڈ بی اور مشن بھگیرتا دونوں کو ملکر مشاورت کے ذریعہ کاموں کی بہتر انجام دہی کی کوشش کریں، کہیں بھی عوام کو دشواری ہونے نہ دیں۔

 

 

 

TOPPOPULARRECENT