Wednesday , December 13 2017
Home / ہندوستان / بلقیس بانو کیس، حکومت گجرات سے رپورٹ طلب

بلقیس بانو کیس، حکومت گجرات سے رپورٹ طلب

خاطی پولیس ملازمین کیخلاف محکمہ جاتی کارروائی سے واقف کرائیں: سپریم کورٹ
نئی دہلی 23 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج حکومت گجرات سے کہاکہ اُسے اندرون چار ہفتے واقف کرایا جائے کہ آیا اُن پولیس عہدیداروں کے خلاف کوئی محکمہ جاتی کارروائی شروع ہوئی یا کی جاچکی ہے جن کی سزا دہی بلقیس بانو اجتماعی عصمت ریزی کیس میں برقرار رکھی گئی ہے۔ چیف جسٹس دیپک مصرا اور جسٹس اے ایم کھانویلکر اور جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ پر مشتمل بنچ نے گینگ ریپ کی شکار کو تازہ اپیل داخل کرنے کی اجازت بھی دی جو اِس کیس میں اُسے قبل ازیں عطا کردہ معاوضہ میں بڑھوتری چاہتی ہے۔ یہ واقعہ 2002 ء کے گجرات فسادات کے دوران پیش آیا تھا۔ گینگ ریپ کی متاثرہ نے معقول معاوضہ اور خاطی پولیس عہدیداروں کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی شروع کرانے کی استدعا کی ہے۔ سپریم کورٹ جس نے حکومت گجرات سے محکمہ جاتی کارروائی کے بارے میں رپورٹ اندرون چار ہفتے طلب کی ہے، اُس نے ریپ کی متاثرہ کے وکیل سے کہاکہ معاوضے کے مسئلے پر ہائیکورٹ کے حکمنامے کے جواز کو چیلنج کرنے والی اپیل علیحدہ طور پر داخل کریں۔ بامبے ہائیکورٹ نے 4 مئی کو اِس کیس میں 12 افراد کی سزاؤں کو برقرار رکھا تھا اور پولیس ملازمین و ڈاکٹروں کے بشمول سات افراد کی برات کالعدم کردی تھی۔ بلقیس بانو جس کی مارچ 2002 ء میں اجتماعی عصمت ریزی ہوئی جبکہ وہ حاملہ تھی، گودھرا ٹرین آتشزدگی واقعہ کے بعد پیش آئے گھناؤنے حالات میں اپنے سات ارکان خاندان کھودی تھی۔

 

TOPPOPULARRECENT