Friday , November 24 2017
Home / سیاسیات / بلقیس بانو کیس : سپریم کورٹ میں مجرمین کی درخواست مسترد

بلقیس بانو کیس : سپریم کورٹ میں مجرمین کی درخواست مسترد

نئی دہلی ۔10جولائی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) سپریم کورٹ نے 2002 ء کے بلقیس بانو اجتماعی عصمت ریزی کے سنسنی خیز مقدمہ میں بمبئی ہائیکورٹ کی طرف سے مجرم قرار دیئے گئے فیصلہ کے خلاف دو ڈاکٹروں اور ایک آئی پی ایس افسر سمیت چار ملازمین کی درخواست کو آج مسترد کرتے ہوئے کہاکہ ان کے خلاف واضح ثبوت ہے ۔ جسٹس ایس اے بوپڈے اور جسٹس ایل ناگیشور راؤ پر مشتمل بنچ نے ان کی اپیلوں کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ تحت کی عدالت نے بلاوجہ انھیں بری کردیا تھا۔ بنچ نے تین اپیلوں کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ ’’تم سب کے خلاف واضح ثبوت رہنے کے باوجود تحت کی عدالت نے تم تمام کو بلاوجہ بری کردیا تھا ‘‘ ۔ آئی پی ایس افسر آر ایس بھگورہ جو فی الحال گجرات میں برسرخدمت ہیں ہائیکورٹ کی طرف سے دیگر چار ملازمین پولیس کے ساتھ جرم کے مرتکب قرار دیئے گئے تھے ۔ ایک پولیس ملازم ادریس عبدل سید نے مجرم قرار دیئے جانے کے خلاف درخواست دائر نہیں کی تھی ۔ بھگورہ نے کہا تھا کہ انھیں غیرضروری طورپر ماخوذ کیا گیاہے کیونکہ اس واقعہ سے ان کا راست تعلق نہیں ہے ۔ لیکن بنچ نے کہا کہ وہ ( بھگورہ) نگراں افسر تھے اور سب کچھ ان کی ماتحتی میں ہوا تھا ۔ ایڈوکیٹ شوبھا نے بلقیس بانو کی پیروی کرتے ہوئے مجرمین کی اپیلوں کی مخالفت کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT