Wednesday , September 26 2018
Home / Top Stories / بلوچستان سرچ آپریشن ’پانچ عسکریت پسند ہلاک‘دو لاشیں برآمد

بلوچستان سرچ آپریشن ’پانچ عسکریت پسند ہلاک‘دو لاشیں برآمد

پشاور ۔ 5جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) عسکریت پسندوں کی فائرنگ سے ایف سی کا ایک اہلکار بھی ہلاک ہوا ہے ۔پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں فرنٹیئر کور نے مختلف کارروائیوں میں پانچ عسکریت پسندوں کو ہلاک اور 17 کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ ان کاروائیوں کے دوران ایف سی کا ایک اہلکار بھی ہلاک ہوا ہے۔کوئٹہ میں فرنٹیئرکور بلوچستان کی جانب سے سنیچر

پشاور ۔ 5جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) عسکریت پسندوں کی فائرنگ سے ایف سی کا ایک اہلکار بھی ہلاک ہوا ہے ۔پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں فرنٹیئر کور نے مختلف کارروائیوں میں پانچ عسکریت پسندوں کو ہلاک اور 17 کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ ان کاروائیوں کے دوران ایف سی کا ایک اہلکار بھی ہلاک ہوا ہے۔کوئٹہ میں فرنٹیئرکور بلوچستان کی جانب سے سنیچر کو جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق ایف سی نے حساس ادارے کے ہمراہ ضلع کیچ کے علاقے شادی کور میں عسکریت پسندوں کے خلاف کاروائی کی۔اس کاروائی کے دوران ایک عسکریت پسند تنظیم کے دو انتہائی اہم کمانڈروں سمیت چار عسکریت پسند ہلاک اور چار زخمی ہوگئے جبکہ تین کو گرفتار کرلیا گیا۔اس دوران عسکریت پسندوں کی فائرنگ سے ایف سی کا ایک اہلکار بھی ہلاک ہوگیا۔ایف سی کے حساس ادارے کے ہمراہ بارکھان کے علاقے اناری میں عسکریت پسندوں کے خلاف سرچ آپریشن میں ایک عسکریت پسند تنظیم کا کمانڈر ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ایک اور سرچ آپریشن میں سبی کے علاقے بکھرا میں ایک کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے پانچ عسکریت پسندوں کو گرفتار کرنے کے علاوہ گوادرمیں بھی دو عسکریت پسندوں کو گرفتار کر لیا گیا۔

دوسری کارروائی میں ایف سی نے تربت کے علاقے تمپ میں سرچ آپریشن کے دوران کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے نو مشتبہ افراد کو گرفتارکرلیا۔واضح رہے کہ گذشتہ سال پشاور میں آرمی سکول پر ہونے والے حملے کے بعد بلوچستان میں جہاں سکیورٹی فورسز کے سرچ آپریشنوں میں تیزی آئی ہے وہاں اب تک ایک بڑی تعداد میں گرفتاریاں بھی عمل میں لائی گئی ہیں۔ذرائع کے کا کہنا تھا کہ دونوں افراد اس سال اپریل کے مہینے میں لاپتہ ہوئے تھے ۔دوسری جانب ضلع خضدار کے علاقے زہری سے دو افراد کی لاشیں ملی ہیں۔ زہری میں لیویز فورس کے ذرائع کے مطابق دونوں لاشیں اندازاً تین ماہ پرانی ہیں۔ذرائع کے کا کہنا تھا کہ دونوں افراد اس سال اپریل کے مہینے میں لاپتہ ہوئے تھے۔ نامعلوم افراد نے ہلاک کرنے کے بعد ان کی لاشیں پھینک دی تھیں۔لیویز فورس کے ذرائع نے بتایا کہ زیادہ پرانی ہونے کی وجہ سے دونوں افراد کے ہڈیوں کے ڈھانچے رہ گئے تھے۔ذرائع کے مطابق دونوں افراد کے پاس سے شناختی دستاویزات ملی ہیں جن سے حاصل کردہ معلومات کے مطابق ان کی شناخت ہوئی ہے۔ ان ذرائع نے بتایا کہ دونوں لاشیں مقامی افراد کی ہیں۔دونوں افراد کی ہلاکت کی وجوہات تاحال معلوم نہیں ہوسکیں۔

TOPPOPULARRECENT