Tuesday , January 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / بل ادائیگی میں ہاؤزنگ عہدیداروں کی لاپرواہی

بل ادائیگی میں ہاؤزنگ عہدیداروں کی لاپرواہی

مستحق کے بجائے کسی دوسرے کو بلز کی ادائیگی

مستحق کے بجائے کسی دوسرے کو بلز کی ادائیگی
یلاریڈی۔17مارچ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ایک راشن کارڈ نمبر درج کر کے دوسرے فردکو بل ادائیگی کا کارنامہ ہاؤزنگ عہدیداروں نے لنگم پیٹ میں انجام دیا اور یہ واقعہ پیش آیا سال 2010ء میں متاثرہ کو اب بتانے پر حیران ہوگیا ۔تفصیلات کے مطابق منڈل لنگم پیٹ کے پرملا موضع سے تعلق رکھنے والے مسٹر بال کشٹیا اپنی بہو رینوکا کے نام راشن کارڈ نمبر WAP 183201700108 نمبر پر اندرا اماں اسکیم کے تحت مکان کیلئے سال 2008ء میں درخواست دیا اور محکمہ ہاؤزنگ عہدیداروں نے رینوکا کے نام پر اندراماں دوسرے مرحلہ میں مکان منظور کیا گیا

‘ بل مگر پرملا تانڈا سے تعلق رکھنے والی سواروپا کو 46ہزار 600 روپئے ادا کردیئے گئے ۔ مکان کیلئے چھ سال سے چکر لگارہا ہوں کہہ کر کشٹیا عہدیداروں سے کہا اوریہ ہاؤزنگ آفس آنے پر عہدیداروں نے اسے خبر سنائی کہ تجھے سال 2008ء میں ہی مکان منظور ہوگیا اور بل بھی ادا کی گئی ۔ یہ سن کر کشٹیا پر سکتہ طاری ہوا ۔ تمام تفصیلات میں جانے پر ہاؤزنگ عہدیداروں نے ریکارڈ دیکھ کر کہا کہ رینوکا کے راشن کارڈ پر سواروپا نامی خاتون کو بل ادا کی گئی ۔

22ڈسمبر سال 2008ء کو چھ ہزار ‘25اکٹوبر 2008ء کو چھ ہزار ‘27نومبر 2010ء کو سات ہزار روپئے ‘6مارچ 2010ء کو 24,650 روپئے‘2مئی 2010کو 2750 روپئے ادا کرنے کا ریکارڈ میں درج ہے ‘ دستیاب ہاؤزنگ انسپکٹر مہیش نے بتایا کہ رینوکا کابل سواروپا کو ادا کیا گیا یہ سچ ہے ‘ ماضی میں کام کرنے والے عہدیداروں نے یہ کارنامہ انجام دیا ہوگا ۔ ہمارا کوئی تعلق نہیں ہے ۔ اس طرح ایک غریب مستحق کو مکان منظور کیا گیا لیکن یہ صرف کاغذ پر رہا اور روپیہ بھی اسے نہ مل سکا ‘ادا کئے جانے کا ریکارڈ مگر درج ضرور ہے ۔ ہاؤزنگ عہدیداروں کی اس قدر لاپرواہی معنی خیز ہے ۔

TOPPOPULARRECENT