بند سب جیلوں میں شیلٹر ہومس قائم کئے جائینگے

معذورین ‘ بے سہارا خواتین اور معمرین کو پناہ ۔ ڈائرکٹر جنرل محابس
حیدرآباد 12 فبروری ( پی ٹی آئی ) تلنگانہ محکمہ محابس نے فیصلہ کیا ہے کہ جن 14 سب جیلوں کو قیدیوں کی کمی کے باعث بند کردینے کا فیصلہ ہوا ہے وہاں ضرورت مندوں کیلئے شیلٹر ہومس قائم کئے جائیں گے ۔ محکمہ کے ایک سینئر عہدیدار نے یہ بات بتائی ۔ مسٹر وی کے سنگھ ڈائرکٹر جنرل محابس نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ نے ریاست میں 14 سب جیلوں کو جہاں قیدی گنجائش سے کم ہیں جاریہ سال کے ختم تک بند کردینے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ہم چاہتے ہیں کہ ان بند ہونے والی سب جیلوں میں بصارت سے محروم ‘ جسمانی معذورین ‘ یتیموں ‘ بے سہارا خواتین ‘ بیماروں اور معمرین کیلئے شیلٹر ہومس شروع کئے جائیں۔ انہوں نے اس تجویز کو محکمہ محابس کی ایک بہترین تجویز قرار دیا ۔ انہوں نے کہا کہ آنند آشرمس کی طرز پر جو چنچلگوڑہ اور چیرلہ پلی سنٹرل جیل میں گداگروں کیلئے شروع کئے گئے ہیں سماج کے پسماندہ اور نظر انداز طبقات اقدامات کئے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ماہرین نفسیات ‘ ڈاکٹرس ‘ والینٹرس اورہیلپرس کی بھرتی کرتے ہوئے یہاں پناہ حاصل کرنے والے افراد کی دیکھ بھال کی جائیگی ۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ کی جانب سے ان شیلٹر ہومس میں رہنے والے افراد کی صلاحیتوں کو ابھارنے کیلئے محکمہ کی جانب سے ٹریننگ بھی دی جائیگی ۔ اس کے علاوہ ان افراد کی جانب سے تیار کی جانے والی اشیا کی مارکٹنگ بھی کی جائے گی ۔ اصل مقصد یہ ہے کہ ان مراکز کو خود مکتفی بنایا جائے ۔ حکومت کی جانب سے ان افراد کی بازآبادکاری کیلئے متبادل انتظامات تک یہاں مراکز کام کرتے رہیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT