Tuesday , December 19 2017
Home / شہر کی خبریں / بنڈلہ گوڑہ آر ٹی اے آفس میں ڈرائیونگ ٹریک کے قیام میں لاپرواہی

بنڈلہ گوڑہ آر ٹی اے آفس میں ڈرائیونگ ٹریک کے قیام میں لاپرواہی

محکمہ ٹرانسپورٹ کی لاپرواہی، استفادہ کنندگان کو تکالیف کا سامنا
حیدرآباد۔24ستمبر(سیاست نیوز) ریاستی سطح کے عہدیداروں کا پرانے شہر کے ساتھ متعصبانہ رویہ کوئی نئی بات نہیں ہے لیکن پرانے شہر میں محکمہ ٹرانسپورٹ کی جانب سے ساؤتھ زون دفتر کیلئے وسیع و عریض اراضی کی فراہمی کے باوجود روڈ ٹرانسپورٹ اتھاریٹی بنڈلہ گوڑہ میں قائم کئے گئے اس دفتر میں ڈرائیونگ ٹریک کے قیام کے سلسلہ میں سنجیدہ نظر نہیں آرہی ہے اور آر ٹی اے کو بنڈلہ گوڑہ دفتر سے کروڑہا روپئے کی آمدنی حاصل ہونے کے باوجود بھی اس دفتر کی ترقی کے سلسلہ میں کوئی اقدامات نہیں کئے جا رہے ہیں بلکہ اس دفتر کو نظر انداز کرنے کی پالیسی اختیار کی گئی ہے جس کے سبب پرانے شہر کے عوام جو لائسنس کے لئے ڈرائیونگ ٹسٹ دینا چاہتے ہیں انہیں ناگول کا رخ کرنا پڑ تا ہے۔ عہدیداروں کے تعصب کے سبب بندلہ گوڑہ آرٹی اے آفس میں تاحال ڈرائیونگ ٹریک کی تعمیر عمل میں نہیں لائی گئی جبکہ اس ڈرائیونگ ٹریک کو منظوری حاصل ہو ئے کافی وقت گذر چکا ہے لیکن بجٹ کی اجرائی میں ہونے والی تاخیر کے سبب ٹریک کی تعمیر تعطل کا شکار بنی ہوئی ہے۔ باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق اس ڈرائیونگ ٹریک کی تعمیر کیلئے 27لاکھ کا تخمینہ لگا یا گیا ہے اور اس میں 10لاکھ روپئے مقامی رکن اسمبلی اپنے بجٹ سے دینے کے لئے تیار بھی ہیں لیکن اس کے باوجود محکمہ آر ٹی اے کے عہدیداروں کی جانب سے اختیار کردہ متعصبانہ رویہ کے متعلق کہا جا رہا ہے کہ وہ 17لاکھ روپئے کی منظوری کے ذریعہ ٹریک کی تعمیر کی راہ ہموار کرنے سے گریز کر رہے ہیں۔ بتایا جاتاہے کہ بعض اعلی عہدیداروں کے شخصی مفادات کے سبب آر ٹی اے آفس بنڈلہ گوڑہ میں وسیع و عریض جگہ موجود ہونے کے بعد بھی ٹریک کی تعمیر کو رکوایا جا رہا ہے کیونکہ ڈرائیونگ ٹسٹ ٹریک کی موجودگی اور مخصوص عہدیداروں کی موجودگی میں ان ٹسٹ کی تکمیل سے بھاری آمدنی ہوتی ہے اور پرانے شہر سے تعلق رکھنے والے شہری ناگول ٹسٹ ٹریک پر ڈرائیونگ ٹسٹ کیلئے جانے مجبور ہیں ۔ آر ٹی اے حکام کا کہنا ہے کہ بندلہ گوڑہ آر ٹی اے دفتر میں وافر جگہ موجود ہونے کے سبب ہی ڈرائیونگ ٹریک کو منظوری دی گئی تھی لیکن گذشتہ ایک سال کے دوران متعدد نمائندگیوں کے باوجود بھی ریاستی سطح کے عہدیداروں کی عدم دلچسپی کے سبب پرانے شہر میں قائم کئے گئے اس آر ٹی اے دفتر کی ترقی نہیں ہوپا رہی ہے اگر اعلی عہدیدار اور خود ریاستی وزیر ٹرانسپورٹ اس مسئلہ پر توجہ دیتے ہیں تو ایسی صورت میں بنڈلہ گوڑہ آر ٹی اے دفتر میں ڈرائیونگ ٹریک کی تعمیر اندرون 2ماہ مکمل کی جا سکتی ہے کیونکہ اس کیلئے مقامی رکن اسمبلی نے 10لاکھ روپئے کی اجرائی کا تیقن دیا ہے اور صرف 17لاکھ روپئے مزید درکار ہیں جو کہ محکمہ کی جانب سے منظور کئے جاتے ہیں تو ساؤتھ زون آر ٹی اے دفتر سے حکومت کو حاصل ہونے والی آمدنی میں زبردست اضافہ ہوسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT