Monday , December 18 2017
Home / Top Stories / بنکاک دھماکہ: ’نشانہ غیر ملکی تھے‘، مشتبہ شخص کی فوٹیج جاری

بنکاک دھماکہ: ’نشانہ غیر ملکی تھے‘، مشتبہ شخص کی فوٹیج جاری

ایغور گروپ کے علاوہ فوجی حکومت کے مخالف گروپس پر کڑی نظر

بنکاک ۔ 18 اگست (سیاست ڈاٹ کام) بنکاک کے ایک مندر میں ہونے والے دھماکے کے بعد اس مشتبہ شخص کی ویڈیو فوٹیج سامنے آئی ہے جس سے پولیس اس معاملے میں تفتیش کرنا چاہتی ہے۔ سی سی ٹی وی کیمرے کی فوٹیج میں زرد رنگ کی ٹی شرٹ پہنے اس نوجوان کو ایروان کے مندر میں ایک بیگ چھوڑ کر جاتے دکھایا گیا ہے۔ سیاحوں میں مقبول ایک مندر پر ہونے والے اس دھماکے میں مرنے والوں کی تعداد اب 21 ہو گئی ہے جن میں آٹھ غیر ملکی بھی شامل ہیں جبکہ 120 سے زیادہ افراد زخمی ہیں۔ حکام نے پہلے اس مشتبہ شخص کی تصاویر جاری کی تھیں تاہم اب فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ وہ انتہائی احتیاط سے اپنا بیگ کمر سے اتار کر مندر کے اندر رکھتا ہے اور پھر اٹھ کر اسے لیے بغیر فوراً باہر چلا جاتا ہے۔ تاہم حکام نے یہ بھی کہا ہے کہ تاحال وہ حملہ آوروں کی شناخت کرنے میں کامیاب نہیں ہوئے ہیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ وہ کسی تنظیم کے ملوث ہونے کے امکان خارج نہیں کر رہے ہیں جن میں اویغور گروپ کے علاوہ ان تنظیموں کو بھی نظر میں رکھا جا رہا ہے جو فوجی حکومت کے خلاف ہیں۔ تھائی لینڈ کے وزیر اعظم نے دارالحکومت بینکاک میں پیر کو ہونے والے بم دھماکے کو ملک میں دہشت گردی کا بدترین واقعہ قرار دیا ہے۔ وزیر اعظم پایوتھ چان اوچا نے کہا کہ ہندو مندر پر کیے جانے والے دھماکے کے مشتبہ شخص کو سی سی ٹی وی کیمرے کی فوٹیج سے پہچان لیا گیا ہے۔

اس سے قبل تھائی لینڈ کے وزیر دفاع نے کہا ہے کہ جنھوں نے بنکاک مندر میں بم نصب کیا تھا انھوں نے ملکی معیشت اور سیاحت کو نقصان پہنچانے کے لیے دانستہ طور پر غیرملکیوں کو نشانہ بنایا۔ وزیر دفاع پراوت وونگسووان نے دارالحکومت میں ہونے والے بم دھماکوں کے مجرموں کو پکڑنے کی کا عزم کیا ہے۔ خیال رہے کہ ایراون مندر سیاحوں کی دلچسپی کا مرکز رہا ہے اور مرنے والوں میں غیر ملکی بھی شامل ہیں۔ اس دھماکے کی کسی نے ابھی تک ذمہ داری قبول نہیں کی اور یہ بھی واضح نہیں کہ اس کو کون نشانہ بنا سکتا ہے۔ یہ دھماکہ ضلع چڈلام میں واقع ایراون مندر کے قریب پیر کو مقامی وقت کے مطابق شام سات بجے ہوا۔ دھماکے کے وقت یہاں بہت بھیڑ تھی۔ وزیر دفاع پراوت وونگ سووونگ کا کہنا ہے کہ ’یہ ٹی این ٹی بم تھا۔ جن لوگوں نے یہ کیا ہے ان کا مقصد غیر ملکیوں کو نشانہ بنانا اور سیاحت اور معیشت کو نقصان پہنچانا تھا۔انھوں نے کہا ہے کہ اس دھماکے کے ذمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔ نیشن ٹی وی چینل کے مطابق وزیر اعظم پرایوتھ چان اوچا نے کہا ہے حکومت اس سے نمٹنے کے لیے ایک وار روم قائم کر رہی ہے۔ مندر کے اردگرد موجود لوگ اس دھماکے کی زد میں آئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT