Monday , January 22 2018
Home / ہندوستان / بنگلہ دیش سے روہنگیاؤں کی میانمار واپسی کا عمل جلد شروع ہوگا : وزیراطلاعات

بنگلہ دیش سے روہنگیاؤں کی میانمار واپسی کا عمل جلد شروع ہوگا : وزیراطلاعات

کولکتہ ۔ 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش کے وزیراطلاعات حسن الحق نے آج توقع ظاہر کی کہ ملک سے روہنگیا پناہ گزینوں کی واپسی کا عمل جلد ہی شروع کیا جائے گا۔ یاد رہیکہ روہنگیاؤں کے خلاف میانمار فوج کی کارروائی کے بعد لاکھوں روہنگیائی بنگلہ دیش فرار ہوگئے تھے اور مختلف عارضی کیمپوں میں انتہائی غیرانسانی ماحول میں زندگی گزارنے پر مجبور تھے۔ تاہم عالمی دباؤ کے بعد میانمار نے گذشتہ سال نومبر میں ہزاروں روہنگیاؤں کو میانمار واپس بلانے پر رضامندی ظاہر کی تھی۔ گذشتہ شب اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میانمار اور بنگلہ دیش کے درمیان ایک معاہدہ کو قطعیت دی گئی ہے جس کے تحت رہنگیاؤں کی میانمار واپسی کا عمل جلد ہی شروع ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ روہنگیاؤں کی مکمل طور پر واپسی کیلئے کوئی مدت متعین نہیں کی گئی ہے لیکن جو روہنگیائی حال ہی میں بنگلہ دیش آئے ہیں، ان کی جانچ پڑتال کے بعد میانمار انہیں واپس لینے آمادہ ہوگیا ہے۔ حسن الحق نے اس موقع پر روہنگیا بحران سے چابکدستی سے نمٹنے وزیراعظم بنگلہ دیش شیخ حسینہ کی ستائش کی۔ انہوں نے کہا کہ پناہ گزینوں کا بحران کسی بھی ملک کی معیشت پر اثرانداز ہوتا ہے لیکن بنگلہ دیش نے یہ آزمائشی امتحان پاس کرلیا ہے۔ اگست 2017ء سے زائد از چھ لاکھ روہنگیائی مسلمان بنگلہ دیش منتقل ہوچکے ہیں جب فوج نے ان کی (روہنگیا) مبینہ دہشت گرد تنظیموں کے خلاف اپنی کارروائی میں تیزی پیدا کی تھی۔ دہشت گردی کے موضوع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے حسن الحق نے کہا کہ بنگلہ دیش میں دہشت گردی ایک ناقابل برداشت جرم ہے اور ملک نے ایسی پالیسی اختیار کی ہے جس کے تحت ڈھاکہ کی سرزمین کو کسی بھی ملک کے خلاف دہشت گردانہ کارروائیوں کے لئے استعمال کرنے نہیں دیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT