Thursday , November 23 2017
Home / عرب دنیا / بنگلہ دیش میں جماعۃ المجاہدین کے سینئر لیڈر کو پھانسی

بنگلہ دیش میں جماعۃ المجاہدین کے سینئر لیڈر کو پھانسی

ڈھاکہ، 17 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش میں جیل حکام کا کہنا ہے کہ ایک مسلم شدت پسند کو پھانسی دے دی گئی ہے جس کو دو ججوں کو ہلاک کرنے کے جرم میں سزائے موت سنائي گئی تھی۔ پولیس حکام کے مطابق 42 سالہ اسد الاسلام کالعدم تنظیم جماعت المجاہدین بنگلہ دیش کے لیڈر تھے ۔ ان کو 2005 میں ہونے والے دھماکے میں ملوث ہونے کے جرم میں سزائے موت کی سنائی گئی تھی۔ 2005 کے اس واقعہ میں دو ججوں کی موت ہوگئی تھی۔ کھلنا کے پولس کمشنر نے خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو بتایا کہ اسد الاسلام کو ساڑھے چار بجے پھانسی دی گئی۔ اسد الاسلام جماعت المجاہدین بنگلہ دیش کے سات سینئر لیڈروں میں سے ایک تھے جن کو 2005 کے بم دھماکے میں ملوث ہونے کے جرم میں سزائے موت سنائی گئی تھی۔ اس کارروائی میں ملوث چھ افراد کو مارچ 2007 میں فوجی حکومت کے وقت پھانسی دے دی گئی تھی۔ اسد کو جولائی 2007 میں حراست میں لیا گیا۔ اسد کی اپیل سپریم کورٹ نے اس سال اگست میں خارج کردی تھی۔ حکام کا کہنا ہے کہ اسد نے صدر سے معافی کی درخواست کرنے سے انکار کر دیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT