Tuesday , December 18 2018

بنگلہ دیش میں سیاسی تشدد پر امریکہ کو تشویش

واشنگٹن 12 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش میں جاری سیاسی تشدد پر امریکہ نے اپنی تشویش ظاہر کرتے ہوئے ملک کی تمام سیاسی جماعتوں سے درخواست کی ہے کہ وہ تشدد سے دور رہیں اور پرامن طریقہ سے اپنے سیاسی فرائض کی انجام دہی کریں۔ کل ایک نیوز کانفرنس کے دوران اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ ترجمان نے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ بنگلہ دیش میں سیاسی تشدد پر

واشنگٹن 12 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش میں جاری سیاسی تشدد پر امریکہ نے اپنی تشویش ظاہر کرتے ہوئے ملک کی تمام سیاسی جماعتوں سے درخواست کی ہے کہ وہ تشدد سے دور رہیں اور پرامن طریقہ سے اپنے سیاسی فرائض کی انجام دہی کریں۔ کل ایک نیوز کانفرنس کے دوران اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ ترجمان نے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ بنگلہ دیش میں سیاسی تشدد پر امریکہ بیحد تشویش میں مبتلا ہے۔ لہذا تمام سیاسی جماعتوں کا یہ فرض ہے کہ وہ تشدد سے دور رہیں اور پرامن طور پر اپنے سیاسی فرائض انجام دیں۔ ایسے نازک وقت میں اپوزیشن کا بھی یہ فرض ہے کہ وہ ذمہ دارانہ طور پر اپنے فرائض انجام دے۔ یاد رہے کہ 5 جنوری سے جاری سیاسی تشدد میں اب تک 115 افراد ہلاک ہوچکے ہیں جس میں زیادہ تر ہلاکتیں ایسی ہیں جو مشتبہ اپوزیشن ورکرس اور کرائے کے غنڈوں کے ذریعہ بسوں اور ٹرکوں پر حملوں کے دوران ہوئیں۔ انتہا پسندوں کے ہاتھوں ایک امریکی نژاد بنگلہ دیشی بلاگر کی ہلاکت کے بارے میں پوچھے جانے پر اُنھوں نے جواب دیا کہ ایف بی آئی تحقیقات میں مقامی حکام کے ساتھ تعاون کررہی ہے۔ یہ 45 سالہ بلاگر اویجیت رائے جو مذہبی انتہا پسندی کے زبردست نقاد تھے کا ڈھاکہ میں انتہا پسندوں نے اُس وقت قتل کردیا تھا جب وہ اپنی بیوی کے ساتھ ایک کتاب میلے میں شرکت کے بعد اپنے مکان واپس جارہے تھے۔

TOPPOPULARRECENT