Tuesday , September 25 2018
Home / Top Stories / بنگلہ دیش میں کلیدی ملزم کی اہلیہ گرفتار

بنگلہ دیش میں کلیدی ملزم کی اہلیہ گرفتار

ڈھاکہ۔ 23 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بردوان دھماکہ کے کلیدی ملزم کی اہلیہ اور ممنوعہ جے ایم بی دہشت گرد گروپ کی شعبہ خواتین کی سربراہ کو آج بنگلہ دیش میں دیگر تین کے ہمراہ گرفتار کرلیا گیا۔ ڈپٹی کمشنر ڈھاکہ میٹروپولیٹن پولیس مسعودالرحمن نے بتایا کہ فاطمہ بیگم نے ہندوستان میں تقریباً 25 خواتین کو ٹریننگ دینے کا اعتراف کیا ہے۔ سمجھا جاتا ہے

ڈھاکہ۔ 23 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بردوان دھماکہ کے کلیدی ملزم کی اہلیہ اور ممنوعہ جے ایم بی دہشت گرد گروپ کی شعبہ خواتین کی سربراہ کو آج بنگلہ دیش میں دیگر تین کے ہمراہ گرفتار کرلیا گیا۔ ڈپٹی کمشنر ڈھاکہ میٹروپولیٹن پولیس مسعودالرحمن نے بتایا کہ فاطمہ بیگم نے ہندوستان میں تقریباً 25 خواتین کو ٹریننگ دینے کا اعتراف کیا ہے۔ سمجھا جاتا ہے کہ بردوران بم دھماکہ کا کلیدی ملزم ساجد ہے اور گرفتار شدہ ان کی اہلیہ فاطمہ بیگم جماعتہ المجاہدین بنگلہ دیش (جے ایم بی) شعبہ خواتین کی سربراہ ہیں۔ یہ دھماکہ مغربی بنگال کے بردوان میں 2 اکتوبر میں ہوا تھا جس میں 2 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ مسعودالرحمن کے حوالے سے مقامی اخبار نے بتایا کہ فاطمہ بیگم اور ان کی تین ساتھیوں کو ڈھاکہ کے صدر گھاٹ پر دھماکو مادوں، بم تیار کرنے والے اجزاء اور جہادی کتابوں کے ساتھ گرفتار کیا گیا۔ پولیس ترجمان منیرالاسلام نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ ہندوستان کی نیشنل انوسٹی گیشن ایجنسی نے فاطمہ بیگم کے بارے میں اہم خفیہ معلومات فراہم کی تھیں۔

این آئی اے کی چار رکنی ٹیم نے گزشتہ ہفتہ ڈھاکہ کا دورہ کیا تھا اور بعض ناموں کے علاوہ 15 موبائیل فون نمبرس بھی فراہم کئے تھے تاکہ اس دھماکے میں مدد کرنے والوں کو گرفتار کیا جاسکے۔ منیرالاسلام نے بتایا کہ ابتدائی تفتیش کے دوران فاطمہ بیگم نے تقریباً 25 خواتین بشمول 5 بنگلہ دیشی خواتین کو کولکتہ کے شیمولیہ علاقہ میں ٹریننگ دینے کا اعتراف کیا ہے۔ فاطمہ بیگم جے ایم بی کی ٹریننگ کوآرڈینیٹر تھی اور وہ بردوان دھماکہ کے وقت ساجد کے ہمراہ تھیں جو جے ایم بی سیاسی شعبہ کا سربراہ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ فاطمہ بیگم نے دھماکہ مادہ شروع کرنے کا بھی اعتراف کیا ہے ، جس کا مقصد بنگلہ دیش اور ہندوستان میں ان کے رہنماؤں کی ہدایت کے مطابق حملے کرنا تھا۔تین خواتین جنہوں نے جے ایم بی میں شمولیت سے دلچسپی ظاہر کی تھی ، فاطمہ بیگم ان کی کوارڈینیٹر تھیں۔ انہوں نے غریب اور متوسط طبقہ کو ارکان بنانے کی خواہش ظاہر کی۔ انہوں نے غریب خواتین کو بازآبادکاری کی پیشکش کرتے ہوئے جے ایم بی میں شمولیت کیلئے راغب کیا تھا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT