Saturday , December 16 2017
Home / کھیل کی خبریں / بنگلہ دیش کرکٹر پر کم عمر ملازمہ کے استحصال کا الزام

بنگلہ دیش کرکٹر پر کم عمر ملازمہ کے استحصال کا الزام

پولیس کا گھر پر دھاوا، مقدمہ درج
ڈھاکہ ۔ 7 ۔ ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش پولیس نے کہاکہ وہ قومی کرکٹر شہادت حسین اور ان کی اہلیہ کو گرفتار کرنے کی کوشش کر رہی ہے،جن پر مبینہ طور پر گھر میں کام کرنے والی 11 سالہ ملازمہ کو زد و کوب کرنے کا الزام ہے۔ پولیس نے کل رات دارالحکومت ڈھاکہ میں اس ملازمہ کو سڑک پر زخمی حالت میں روتے ہوئے پایا۔ اس کے بعد فاسٹ بولر اور ان کی اہلیہ نیریتو شہادت کے گھر پر دھاوا کیا گیا۔ پولیس انسپکٹر انور حسین نے کہا کہ اس ملازمہ نے بتایا کہ آنکھ اور جسم کے دیگر حصوں پر زخم آئے ہیں، وہ رو رہی تھی اور پولیس نے اسے بچالیا ۔ اس نے پولیس کو بتایا کہ وہ کرکٹر شہادت حسین کے گھر میں ملازمہ ہے۔ اس نے کہا کہ کرکٹر اور ان کی اہلیہ اسے مسلسل ہراساں کرتے ہیں۔ اس ملازمہ محفوظہ اختر کی آنکھ میں سوجن دکھائی دے رہی تھی۔ اس نے خانگی ٹیلی ویژن چیانل کو بتایا کہ کرکٹر اور ان کی اہلیہ نے اسے زد و کوب کیا ہے۔ پولیس نے اس لڑکی کو علاج کیلئے ڈھاکہ ہاسپٹل منتقل کیا اور کرکٹر اور ان کی اہلیہ کے خلاف بچوں کے استحصال کا الزام عائد کرتے ہوئے مقدمہ درج کرلیا ہے۔ مقامی پولیس آفیسر تنویر نے بتایا کہ اتوار کی رات شہادت حسین کے گھر پر دھاوا کیا گیا لیکن وہ موجود نہیں تھے۔ آج صبح بھی ہم نے انہیں گرفتار کرنے کی کوشش کی۔ شہادت حسین نے بنگلہ دیش کیلئے 38 ٹسٹ اور 51 ونڈے میچس کھیلے۔ ہندوستان اور جنوبی افریقہ کے خلاف حالیہ سیریز میں وہ ٹخنہ زخمی ہونے کی وجہ سے حصہ نہیں لے سکے تھے۔

TOPPOPULARRECENT