Tuesday , December 12 2017
Home / ہندوستان / بنگلہ دیش کی سرحد پر دینی مدرسے

بنگلہ دیش کی سرحد پر دینی مدرسے

قوم دشمن سرگرمیوں کے اڈے  : بی جے پی
کولکتہ ۔5جون ( سیاست ڈاٹ کام)  مغربی بنگال کی بی جے پی نے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر ہند ۔ بنگلہ دیش سرحد کی ناکہ بندی کردی جائے اور دعویٰ کیا ہے کہ یہاں سرگرم دینی مدرسے دراصل دہشت گردی اور قوم دشمن سرگرمیوں کے اڈے ہیں ۔ ریاستی بی جے پی کے صدر دلیپ گھوش نے کہاکہ ہم سب جانتے ہیں کہ یہ سرحدی علاقہ پر قائم یہ مدرسے قوم دشمن عناصر کی افزائش نسل کے اڈے ہے ۔یہ مدرسے بیرونی ممالک سے مالیہ حاصل کرتے ہیں ۔ یہ مدرسے ایک سلسلہ قائم کرچکے ہیں جس کی وجہ سے ہند ۔ بنگلہ دیش سرحد قوم دشمن سرگرمیوں کے اعتبار سے اور غیر قانونی مویشیوں کی تجارت و اسمگلنگ کے لحاظ سے مخدوش بن گئے ۔ اپنے دعویٰ کو جائز قرار دیتے ہوئے انہوں نے ایک بیان کا حوالہ دیا جو مغربی بنگال کے سابق چیف منسٹر بدھا دیپ بھٹاچاریہ نے دیا ہے جس میں کہا گیا تھا کہ سرحدی علاقہ پر کارکرد دینی مدرسے بنیاد پرستی کی افزائش کا مقام ہے ۔

TOPPOPULARRECENT