Saturday , December 16 2017
Home / عرب دنیا / بنگلہ دیش کے روہنگیا کیمپوں میں ہیضہ پھیلنے کا اندیشہ : عالمی صحت تنظیم

بنگلہ دیش کے روہنگیا کیمپوں میں ہیضہ پھیلنے کا اندیشہ : عالمی صحت تنظیم

کاکس بازار ( بنگلہ دیش ) ۔ 25 ۔ ستمبر : (سیاست ڈاٹ کام ) : عالمی صحت تنظیم WHO) ) نے آج انتباہ دیا ہے کہ بنگلہ دیش میں روہنگیا مسلمانوں کے لیے جو عارضی پناہ گزین کیمپس قائم کئے گئے ہیں ۔ وہاں چونکہ حفظان صحت پر کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے لہذا ہیضہ کی وبا پھیلنے کا اندیشہ موجود ہے ۔ یاد رہے کہ میانمار میں بدھسٹوں کے ظلم و جبر اور قتل عام کا شکار تقریبا 436000 روہنگیامسلمان اس وقت بنگلہ دیش میں پناہ گزین ہیں جس سے خود بنگلہ دیش کی معیشت کو بھی خطرہ لاحق ہوگیا ہے ۔ عالمی صحت تنظیم کے مطابق روہنگیا مسلمانوں کی آمد کا سلسلہ تقریبا ایک ماہ پہلے شروع ہوا تھا اور انہوں نے سرحد کے قریب تقریبا 68 عارضی پناہ گاہوں میں پناہ لے رکھی ہے جہاں بنیادی حفظان صحت کا فقدان ہے ۔ سب سے اہم بات یہ ہے کہ انہیں پینے کے لیے صاف و شفاف پانی تک میسر نہیں ہے جس سے آلودہ پانی کی وجہ سے پیدا ہونے والی بیماریاں جیسے ہیضہ پھوٹ پڑنے کا اندیشہ ہے ۔ روہنگیا شہریوں کی اضافی آمد نے کاکس بازار کے قریب واقع کیمپوں کی بھیڑ بھار میں اضافہ کردیا ہے جن میں قبل ازیں 3 لاکھ افراد پناہ گزین تھے جو پہلے فرار ہو کر یہاں پہنچے تھے جب راکھین اسٹیٹ میں تشدد پھوٹ پڑاتھا ۔ عالمی صحت تنظیم کا یہ بھی کہنا ہے کہ متعدد مقامات پر موبائل میڈیکل سنٹرس بھی قائم کئے گئے ہیں جب کہ بنگلہ دیش ہیلتھ حکام نے اعداد و شمار پیش کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ ایک ماہ کے دوران تقریبا 4500 روہنگیاؤں کے دست سے متاثر ہونے کا علاج کیا گیا ہے جب کہ 80,000 بچوں کو چیچک اور پولیو کے ٹیکے بھی دئیے گئے ہیں ۔ دریں اثناء بنگلہ دیش کی ہیلتھ سروسیس کے نائب سربراہ عنایت حسین نے کہا کہ ہم تمام چیلنجز کا سامنا کرنے یوں تو پوری طرح تیار ہیں لیکن اس کے باوجود بھی ہمیں تشویش ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT