Wednesday , December 19 2018

بنگلہ دیش ‘ وسط مدتی انتخابات تک احتجاج کا اعلان

ڈھاکہ 13 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) بنگلہ دیش میں قائد اپوزیشن خالدہ ضیا نے آج ملک میں منصفانہ اور جامع وسط مدتی انتخابات کروانے اپنے مطالبہ کا اعادہ کیا اور کہا کہ وہ اس وقت تک اپنا احتجاج جاری رکھیں گی جب تک وزیر اعظم شیخ حسینہ قبل از وقت انتخابات کیلئے تیار نہیں ہوجاتیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کا یہ احتجاج حکومت کو انتخابات کیلئے مجبور کرنے

ڈھاکہ 13 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) بنگلہ دیش میں قائد اپوزیشن خالدہ ضیا نے آج ملک میں منصفانہ اور جامع وسط مدتی انتخابات کروانے اپنے مطالبہ کا اعادہ کیا اور کہا کہ وہ اس وقت تک اپنا احتجاج جاری رکھیں گی جب تک وزیر اعظم شیخ حسینہ قبل از وقت انتخابات کیلئے تیار نہیں ہوجاتیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کا یہ احتجاج حکومت کو انتخابات کیلئے مجبور کرنے کے مقصد سے کیا جا رہا ہے ۔ بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی کی سربراہ و سابق وزیر اعظم خالدہ ضیا نے ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ یہ تحریک اس وقت تک جاری رہیگی جب تک یہ منطقی انجام تک نہیں پہونچ جاتی ۔ وہ عوام سے اپیل کرتی ہیں کہ وہ عظیم تر قومی مفاد میں اس احتجاج کو قبول کریں۔ جاریہ سال 6 جنوری سے شروع ہوئے وسیع تر احتجاج کے بعد وہ دوسری مرتبہ عوام میں دیکھی گئی ہیں۔ اس احتجاج میں اب تک 120 افراد لقمہ اجل بن گئے ہیں۔ انہو نے اپنی کٹر حریف شیخ حسینہ سے کہا کہ وہ آزادانہ اور جامع انتخابات کے انعقاد ‘ پارلیمنٹ کی تحلیل جیسے کاموں کیلئے سب سے مشاورت کا عمل شروع کریں اور جو جماعتیں کٹھ پتلی اپوزیشن کا رول ادا کر رہی ہیں انہیں بھی ختم کیا جانا چاہئے ۔ خالدہ ضیا نے کہا کہ ان کا احتجاج یا عوامی تحریک اس وقت تک جاری رہے گی جب تک ملک میں وسط مدتی انتخابات کا اعلان نہیں کردیا جاتا ۔ انہوں نے کہا کہ ملک ایک زبردست بحران کا شکار ہے اور شیخ حسینہ اس بحران کی ذمہ دار ہیں۔ انہوں نے ملک کو انتہائی غیر یقینی صورتحال کا شکار کردیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT