Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / بوجہ گٹہ اراضی تحفظ کو یقینی بنانے پر زور : ایم سرینواس

بوجہ گٹہ اراضی تحفظ کو یقینی بنانے پر زور : ایم سرینواس

تحفظ اراضی کیلئے تحریک شروع کرنے کا انتباہ ، سی پی آئی ایم سکریٹری کی پریس کانفرنس
حیدرآباد /20 ستمبر ( سیاست نیوز ) بوجہ گٹہ اراضی کے تحفظ کو یقینی بنانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا ( مارکسٹ ) سی پی آئی ایم نے کہا کہ اس اراضی کے تحفظ کیلئے عوامی تحریک شروع کی جائے گی ۔ سی پی ایم نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اراضی کو اپنی تحویل میں لے اور اس اراضی پر غریب و بے گھر افراد کیلئے ڈبل بیڈروم مکانات کی اسکیم کو عمل میںلائے ۔ آج ایک پریس کانفرنس کے دوران سی پی آئی ایم سٹی سکریٹری مسٹر ایم سرینواس نے کہا کہ حکومت سنجیدہ اقدامات کرنے میں ناکام ثابت ہو رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ڈبل بیڈروم مکانات کی اس اسکیم کو شہر کے درمیان عمل میں لاتے ہوئے حکومت اپنے وعدوں کو عملی شکل دے سکتی ہے ۔ انہوں نے حکومت پر الزام لگایا کہ وہ مجلسی قائدین اور رائلسیما علاقہ کے ایم پی کی دوستی میں غریبوں کا نقصان کر رہی ہے ۔ سی پی ایم نے پریس کانفرنس میں شواہد و ثبوت پیش کرتے ہوئے بتایا کہ 2 سال قبل ہی کلکٹر نے اس اراضی پر کسی بھی قسم کے کسی سوسائٹی کے اختیارات کو مسترد کردیا تھا اور باضابطہ ایک تحریری نوٹ بھی دیا تھا ۔ انہوں نے بتایا کہ مصطفی سوسائٹی اور ایودھیہ نگر سوسائٹی کی اراضی پر کسی قسم کا کوئی اختیار نہیں ہے ۔ جبکہ 6 ایکر اراضی جس پر مصطفی سوسائٹی کا دعوی کیا جارہا ہے ۔ پتھر پھوڑنے کا کام جاری ہے اور اس علاقہ سے غریب جھونپڑپٹی عوام کو ہراساں کرتے ہوئے نکال دیا جارہا ہے ۔ انہوں نے افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اتنا سب کچھ ہونے کے باوجود بھی ٹی آر ایس حکومت کی جانب سے اقدامات کا نہ ہونا حکومت کے کردار پر شبہات کا سبب بن رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سی پی ایم نے اس اراضی کے تحفظ اور اس پر غریب و بے گھر افراد کو بسانے کیلئے بڑے پیمانے پر عوامی تحریک کو شروع کرتے ہوئے تحریک میں غریب و بے گھر افراد کو شامل کیا جائے گا ۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ شادی خانہ اور تعمیری کاموں کی اعلی سطحی تحقیقات کرے اور انصاف کرے ۔

TOPPOPULARRECENT