Thursday , November 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / بودھن میں کل جماعتی احتجاجی اجلاس کا انعقاد روہنگیا مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم پر شدید غصہ و غم ، اجتماعی دعاء کا اہتمام بودھن /15 ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) آج مسلمانان بودھن کی کثیر تعداد نے بعد نماز جمعہ ڈاکٹر علامہ اقبال اردو گھر بودھن میں منعقدہ کل جماعتی احتجاجی اجلاس میں شرکت کرتے ہوئے برما کے مسلمانان پر ڈھائے جانے والے مظالم پر اپنے شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے مظلوم برمی مسلمانوں کو راحت پہونچانے اجتماعی دعاء کی قبل ازیں صدر جماعت اسلامی شاخ بودھن جناب محمد عابد حسین فاروقی نے بعض نیوز چیانل اور سوشیل میڈیا پر روہنگی مسلمانوں پر جاری ظلم ستم کی منظر کشی کرتے ہوئے حاضرین جلسہ کو غم سار و اشکبار کردیا ۔ انہوں نے برما کے بے بس مسلمان مہاجرین کو ہندوستان میں پناہ دینے کی مودی حکومت سے التجا کرتے ہوئے ان پناہ گزین کو مسلمانان ہند کی طرف بطور امراد بذریعہ محاصل مدد کرنے کا حکومت کی پیشکشی کیا ۔ عابد صوفی ایڈوکیٹ نے برما میں مسلمانوں کے قتل اور اجتماعی تدفین و نعشوں کی بے حرمتی کے خلاف سخت الفاظ میں مذمت کی اور انہوں نے اسلامی ممالک کی طرف سے اس قتل عام کے تعلق سے کسی بھی ردعمل کے عدم اظہار پر افسوس کا اظہار کیا ۔ عابد صوفی نے ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی جانب سے حکومت ہندد کو برما میں جاری مسلمانوں پر تشدد کی روک تھام کیلئے اقدامات کرنے کی خواہش کی ستائش کی اور انہوں نے ہندوستان کے پرامن ہندو شہری کو اپنے احساسات سے واقف کروانے برما کے سفیر کو سوشیل میڈیا پر و ای میل کے ذریعہ احتجاجی مرسلے روانہ کرنے کی خواہش کی ۔ مفتی شیخ جابر الشاعتی نے مسلمانوں کو مذہب اسلام کے امن کا پیام عام کرنے کی خواہش کی ۔ مولانا سید عبدالباقی نظامی مولانا عبدالخالق محمودی عابد سیٹھ احمد عبدالسمیع نے بھی اس احتجاجی جلسہ کو مخاطب کیا ۔ تیز دھوپ کے باوجود شہریاں بودھن کی کثیر تعداد نے ان میان سوچی اور بدھ مت پیشوا کے مخالف نعرے لکھے ہوئے پلے کارڈس ہاتھوں میں تھامے ہوئے اس جلسہ گاہ میں پہونچے ۔ پولیس نے ریالی نکالنے کی اجازت نہیں دی لیکن پھر بھی مسلمانان بودھن نے جلسہ کے اختتام پر سب کلکٹر آفس تک انفرادی طور پر پہونچکر اپنے غم و غصے اور مائنمار کے مسلمانوں کو فوری راحت پہونچانے کیلئے حکومت ہند سے پیش قدمی کرنے پر مبنی ایک یادداشت سب کلکٹر بودھن سکتا پٹنایک کو پیش کی اس کل جماعتی جلسہ کے کنوینر نائب صدر بلدیہ حبیب خان تھے جلسہ کی کارروائی کبیر احمد شکیل نے چلائی ۔

بودھن میں کل جماعتی احتجاجی اجلاس کا انعقاد روہنگیا مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم پر شدید غصہ و غم ، اجتماعی دعاء کا اہتمام بودھن /15 ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) آج مسلمانان بودھن کی کثیر تعداد نے بعد نماز جمعہ ڈاکٹر علامہ اقبال اردو گھر بودھن میں منعقدہ کل جماعتی احتجاجی اجلاس میں شرکت کرتے ہوئے برما کے مسلمانان پر ڈھائے جانے والے مظالم پر اپنے شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے مظلوم برمی مسلمانوں کو راحت پہونچانے اجتماعی دعاء کی قبل ازیں صدر جماعت اسلامی شاخ بودھن جناب محمد عابد حسین فاروقی نے بعض نیوز چیانل اور سوشیل میڈیا پر روہنگی مسلمانوں پر جاری ظلم ستم کی منظر کشی کرتے ہوئے حاضرین جلسہ کو غم سار و اشکبار کردیا ۔ انہوں نے برما کے بے بس مسلمان مہاجرین کو ہندوستان میں پناہ دینے کی مودی حکومت سے التجا کرتے ہوئے ان پناہ گزین کو مسلمانان ہند کی طرف بطور امراد بذریعہ محاصل مدد کرنے کا حکومت کی پیشکشی کیا ۔ عابد صوفی ایڈوکیٹ نے برما میں مسلمانوں کے قتل اور اجتماعی تدفین و نعشوں کی بے حرمتی کے خلاف سخت الفاظ میں مذمت کی اور انہوں نے اسلامی ممالک کی طرف سے اس قتل عام کے تعلق سے کسی بھی ردعمل کے عدم اظہار پر افسوس کا اظہار کیا ۔ عابد صوفی نے ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی جانب سے حکومت ہندد کو برما میں جاری مسلمانوں پر تشدد کی روک تھام کیلئے اقدامات کرنے کی خواہش کی ستائش کی اور انہوں نے ہندوستان کے پرامن ہندو شہری کو اپنے احساسات سے واقف کروانے برما کے سفیر کو سوشیل میڈیا پر و ای میل کے ذریعہ احتجاجی مرسلے روانہ کرنے کی خواہش کی ۔ مفتی شیخ جابر الشاعتی نے مسلمانوں کو مذہب اسلام کے امن کا پیام عام کرنے کی خواہش کی ۔ مولانا سید عبدالباقی نظامی مولانا عبدالخالق محمودی عابد سیٹھ احمد عبدالسمیع نے بھی اس احتجاجی جلسہ کو مخاطب کیا ۔ تیز دھوپ کے باوجود شہریاں بودھن کی کثیر تعداد نے ان میان سوچی اور بدھ مت پیشوا کے مخالف نعرے لکھے ہوئے پلے کارڈس ہاتھوں میں تھامے ہوئے اس جلسہ گاہ میں پہونچے ۔ پولیس نے ریالی نکالنے کی اجازت نہیں دی لیکن پھر بھی مسلمانان بودھن نے جلسہ کے اختتام پر سب کلکٹر آفس تک انفرادی طور پر پہونچکر اپنے غم و غصے اور مائنمار کے مسلمانوں کو فوری راحت پہونچانے کیلئے حکومت ہند سے پیش قدمی کرنے پر مبنی ایک یادداشت سب کلکٹر بودھن سکتا پٹنایک کو پیش کی اس کل جماعتی جلسہ کے کنوینر نائب صدر بلدیہ حبیب خان تھے جلسہ کی کارروائی کبیر احمد شکیل نے چلائی ۔

بودھن میں کل جماعتی احتجاجی اجلاس کا انعقاد
روہنگیا مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم پر شدید غصہ و غم ، اجتماعی دعاء کا اہتمام

بودھن /15 ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) آج مسلمانان بودھن کی کثیر تعداد نے بعد نماز جمعہ ڈاکٹر علامہ اقبال اردو گھر بودھن میں منعقدہ کل جماعتی احتجاجی اجلاس میں شرکت کرتے ہوئے برما کے مسلمانان پر ڈھائے جانے والے مظالم پر اپنے شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے مظلوم برمی مسلمانوں کو راحت پہونچانے اجتماعی دعاء کی قبل ازیں صدر جماعت اسلامی شاخ بودھن جناب محمد عابد حسین فاروقی نے بعض نیوز چیانل اور سوشیل میڈیا پر روہنگی مسلمانوں پر جاری ظلم ستم کی منظر کشی کرتے ہوئے حاضرین جلسہ کو غم سار و اشکبار کردیا ۔ انہوں نے برما کے بے بس مسلمان مہاجرین کو ہندوستان میں پناہ دینے کی مودی حکومت سے التجا کرتے ہوئے ان پناہ گزین کو مسلمانان ہند کی طرف بطور امراد بذریعہ محاصل مدد کرنے کا حکومت کی پیشکشی کیا ۔ عابد صوفی ایڈوکیٹ نے برما میں مسلمانوں کے قتل اور اجتماعی تدفین و نعشوں کی بے حرمتی کے خلاف سخت الفاظ میں مذمت کی اور انہوں نے اسلامی ممالک کی طرف سے اس قتل عام کے تعلق سے کسی بھی ردعمل کے عدم اظہار پر افسوس کا اظہار کیا ۔ عابد صوفی نے ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی جانب سے حکومت ہندد کو برما میں جاری مسلمانوں پر تشدد کی روک تھام کیلئے اقدامات کرنے کی خواہش کی ستائش کی اور انہوں نے ہندوستان کے پرامن ہندو شہری کو اپنے احساسات سے واقف کروانے برما کے سفیر کو سوشیل میڈیا پر و ای میل کے ذریعہ احتجاجی مرسلے روانہ کرنے کی خواہش کی ۔ مفتی شیخ جابر الشاعتی نے مسلمانوں کو مذہب اسلام کے امن کا پیام عام کرنے کی خواہش کی ۔ مولانا سید عبدالباقی نظامی مولانا عبدالخالق محمودی عابد سیٹھ احمد عبدالسمیع نے بھی اس احتجاجی جلسہ کو مخاطب کیا ۔ تیز دھوپ کے باوجود شہریاں بودھن کی کثیر تعداد نے ان میان سوچی اور بدھ مت پیشوا کے مخالف نعرے لکھے ہوئے پلے کارڈس ہاتھوں میں تھامے ہوئے اس جلسہ گاہ میں پہونچے ۔ پولیس نے ریالی نکالنے کی اجازت نہیں دی لیکن پھر بھی مسلمانان بودھن نے جلسہ کے اختتام پر سب کلکٹر آفس تک انفرادی طور پر پہونچکر اپنے غم و غصے اور مائنمار کے مسلمانوں کو فوری راحت پہونچانے کیلئے حکومت ہند سے پیش قدمی کرنے پر مبنی ایک یادداشت سب کلکٹر بودھن سکتا پٹنایک کو پیش کی اس کل جماعتی جلسہ کے کنوینر نائب صدر بلدیہ حبیب خان تھے جلسہ کی کارروائی کبیر احمد شکیل نے چلائی ۔

روہنگیا مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم پر شدید غصہ و غم ، اجتماعی دعاء کا اہتمام

بودھن /15 ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) آج مسلمانان بودھن کی کثیر تعداد نے بعد نماز جمعہ ڈاکٹر علامہ اقبال اردو گھر بودھن میں منعقدہ کل جماعتی احتجاجی اجلاس میں شرکت کرتے ہوئے برما کے مسلمانان پر ڈھائے جانے والے مظالم پر اپنے شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے مظلوم برمی مسلمانوں کو راحت پہونچانے اجتماعی دعاء کی قبل ازیں صدر جماعت اسلامی شاخ بودھن جناب محمد عابد حسین فاروقی نے بعض نیوز چیانل اور سوشیل میڈیا پر روہنگی مسلمانوں پر جاری ظلم ستم کی منظر کشی کرتے ہوئے حاضرین جلسہ کو غم سار و اشکبار کردیا ۔ انہوں نے برما کے بے بس مسلمان مہاجرین کو ہندوستان میں پناہ دینے کی مودی حکومت سے التجا کرتے ہوئے ان پناہ گزین کو مسلمانان ہند کی طرف بطور امراد بذریعہ محاصل مدد کرنے کا حکومت کی پیشکشی کیا ۔ عابد صوفی ایڈوکیٹ نے برما میں مسلمانوں کے قتل اور اجتماعی تدفین و نعشوں کی بے حرمتی کے خلاف سخت الفاظ میں مذمت کی اور انہوں نے اسلامی ممالک کی طرف سے اس قتل عام کے تعلق سے کسی بھی ردعمل کے عدم اظہار پر افسوس کا اظہار کیا ۔ عابد صوفی نے ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی جانب سے حکومت ہندد کو برما میں جاری مسلمانوں پر تشدد کی روک تھام کیلئے اقدامات کرنے کی خواہش کی ستائش کی اور انہوں نے ہندوستان کے پرامن ہندو شہری کو اپنے احساسات سے واقف کروانے برما کے سفیر کو سوشیل میڈیا پر و ای میل کے ذریعہ احتجاجی مرسلے روانہ کرنے کی خواہش کی ۔ مفتی شیخ جابر الشاعتی نے مسلمانوں کو مذہب اسلام کے امن کا پیام عام کرنے کی خواہش کی ۔ مولانا سید عبدالباقی نظامی مولانا عبدالخالق محمودی عابد سیٹھ احمد عبدالسمیع نے بھی اس احتجاجی جلسہ کو مخاطب کیا ۔ تیز دھوپ کے باوجود شہریاں بودھن کی کثیر تعداد نے ان میان سوچی اور بدھ مت پیشوا کے مخالف نعرے لکھے ہوئے پلے کارڈس ہاتھوں میں تھامے ہوئے اس جلسہ گاہ میں پہونچے ۔ پولیس نے ریالی نکالنے کی اجازت نہیں دی لیکن پھر بھی مسلمانان بودھن نے جلسہ کے اختتام پر سب کلکٹر آفس تک انفرادی طور پر پہونچکر اپنے غم و غصے اور مائنمار کے مسلمانوں کو فوری راحت پہونچانے کیلئے حکومت ہند سے پیش قدمی کرنے پر مبنی ایک یادداشت سب کلکٹر بودھن سکتا پٹنایک کو پیش کی اس کل جماعتی جلسہ کے کنوینر نائب صدر بلدیہ حبیب خان تھے جلسہ کی کارروائی کبیر احمد شکیل نے چلائی ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT