Tuesday , January 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / بودھن ڈیویژن کے اُردو میڈیم مدارس مسائل سے دوچار

بودھن ڈیویژن کے اُردو میڈیم مدارس مسائل سے دوچار

بودھن 24 اکٹوبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بودھن ڈیویژن کے اُردو میڈیم مدارس کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ بعض مدارس میں طلبہ زیادہ ہیں تو اساتذہ کی کمی ہے اور جہاں طلبہ کی تعداد کم ہے وہاں تمام مضامین پڑھانے اساتذہ موجود ہیں۔ اُردو مدارس میں اساتذہ و طلبہ کے اس عدم توازن کو ختم کرتے ہوئے حسب ضرورت اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں کو تبادلوں یا ڈیپو

بودھن 24 اکٹوبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بودھن ڈیویژن کے اُردو میڈیم مدارس کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ بعض مدارس میں طلبہ زیادہ ہیں تو اساتذہ کی کمی ہے اور جہاں طلبہ کی تعداد کم ہے وہاں تمام مضامین پڑھانے اساتذہ موجود ہیں۔ اُردو مدارس میں اساتذہ و طلبہ کے اس عدم توازن کو ختم کرتے ہوئے حسب ضرورت اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں کو تبادلوں یا ڈیپوٹیشن کے ذریعہ مکمل کرنے کی خواہش کے ساتھ تلنگانہ اُردو جرنلسٹ فورم بودھن کا ایک وفد ڈپٹی ڈی ای او بودھن مسٹر پدمانابھم سے ملاقات کرتے ہوئے انھیں شکر نگر بوائز ہائی اسکول اور بی ٹی نگر ہائی اسکول کے طلبہ و اساتذہ کی تعداد سے واقف کروایا جہاں شکر نگر ہائی اسکول اُردو میڈیم میں تمام 6 مضامین پڑھانے اساتذہ موجود ہیں لیکن یہاں طلبہ کی جملہ تعداد صرف 38 ہے۔ جبکہ اسی شہر بودھن میں واقع بی ٹی نگر ہائی اسکول اُردو میڈیم میں جملہ 205 طلبہ زیرتعلیم ہیں۔ یہاں مستقل صرف دو اساتذہ ہیں۔ تلنگانہ جرنلسٹ فورم کے قائدین نے ڈپٹی ڈی ای او سے خواہش کی کہ ڈائیٹ سنٹر نظام آباد میں موجود ایک زائد ریاضی کے مدرس کا تبادلہ بی ٹی نگر ہائی اسکول میں عمل میں لایا جاسکتا ہے جہاں حساب کے ٹیچر کی کمی کی وجہ سے دسویں جماعت کے سالانہ امتحان کے نتائج پر بُرا اثر
پڑرہا ہے۔ ڈپٹی ڈی ای او نے بتایا کہ ریاستی حکومت نے جی او نمبر 6 جاری کرتے ہوئے محکمہ تعلیمات کو ہدایت دی ہے کہ طلبہ و اساتذہ کی تعداد کے حساب سے ازسرنو مدارس کا جائزہ لے کر اساتذہ کا تقرر عمل میں لایا جائے۔ اُنھوں نے بتایا کہ رکن اسمبلی بودھن شکیل عامر نے اپنے دورہ شکر نگر ہائی اسکول کے دوران طلباء و اساتذہ کی تعداد دریافت کرنے کے بعد اُنھوں نے شکر نگر گورنمنٹ ہائی اسکول میں موجود اساتذہ کی خدمات جہاں زائد طلبہ ہیں وہاں حاصل کرنے کی محکمہ تعلیمات کے عہدیداروں سے خواہش کی تھی۔ اس ضمن میں ضلع انتظامیہ کو رپورٹ روانہ کی جاچکی ہے۔ ڈپٹی ڈی ای او سے ملاقات کرکے یادداشت پیش کرنے والے صحافیوں کے وفد میں جناب محمد خورشید حسین اختر، ڈاکٹر محمد لطیف الدین قریشی، مرزا جلیل بیگ، عبداللہ قریشی کے علاوہ محمد عمر اور محمد کاظم بھی شامل تھے۔

TOPPOPULARRECENT