Wednesday , December 12 2018

بوکوحرم کے حملوں سے 11000 افراد دس دن میں نائجیریا سے فرار

جنیوا ۔ 13 ۔ جنوری ( سیاست ڈاٹ کام) گیارہ ہزار سے زیادہ افراد جن میں سے بیشتر خواتین اور بچے تھے، نائجیریا سے فرار ہوکر پڑوسی ملک چاڈ میں پناہ لے چکے ہیں کیونکہ بوکوحرم کے عسکریت پسندوں نے ملک کے شمال مشرقی علاقہ میں بے رحمانہ حملوں کا سلسلہ جاری رکھا ہے ۔ اقوام متحدہ نے کہا کہ اسلام پسند گروپ نے قصبہ باگا پر 3 جنوری کو حملہ کیا تھا اور

جنیوا ۔ 13 ۔ جنوری ( سیاست ڈاٹ کام) گیارہ ہزار سے زیادہ افراد جن میں سے بیشتر خواتین اور بچے تھے، نائجیریا سے فرار ہوکر پڑوسی ملک چاڈ میں پناہ لے چکے ہیں کیونکہ بوکوحرم کے عسکریت پسندوں نے ملک کے شمال مشرقی علاقہ میں بے رحمانہ حملوں کا سلسلہ جاری رکھا ہے ۔ اقوام متحدہ نے کہا کہ اسلام پسند گروپ نے قصبہ باگا پر 3 جنوری کو حملہ کیا تھا اور پورے قصبہ کے مکانوں کو زمین دوس کردیا تھا۔ کم از کم 16 مضافاتی آبادیوں کو بھی تباہ کر دیا گیا تھا ۔ 2009 ء میں بوکو حرم کی مہلک شورش پسندی کا آغاز ہوا۔ اقوام متحدہ کے پناہ گزینوں کے ادارہ کے بموجب 11320 افراد پڑوسی ملک چاڈ پہنچ چکے ہیں اور ان میں سے 60 فیصد خواتین اور بچے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT