Saturday , December 15 2018

بچوں کا قبرستان قلعہ گولکنڈہ پر ناجائز قبضہ جات

وقف جائیداد پر قبضہ کی مذموم کوشش ، وقف بورڈ کارروائی سے قاصر
حیدرآباد۔ 11 ستمبر (سیاست نیوز) قلعہ گولکنڈہ میں بچوں کا قبرستان پر ناجائز قابضین کی نظر بڑھتی جارہی ہے۔ علاقہ میں کئی ایک ایسی اراضیات و مقامات پر ناجائز قبضوں کی شکایتیں اور الزامات منظر عام پر آرہے ہیں اور ان الزامات کے گھیرے میں سیاسی قائدین کے ملوث ہونے یا پھر ان کی مبینہ پشت پناہی کی عوام شکایت کررہے ہیں۔ ایسا ہی ایک مقام بچوں کا قبرستان ہے۔ اس قبرستان کو ناجائز قبضہ کی نیت سے ایک حصہ تک محدود کرتے ہوئے اب اس پر قبضہ اور فروخت کرنے کی کوشش جاری ہے۔ مقامی عوام نے بتایا کہ یہ جائیداد درج اوقاف ہے اور اس کی باضابطہ گزٹ میں نشاندہی بھی کی گئی ہے تاہم قبضہ کی مذموم کوششیں جاری ہیں۔ شکایت گذار کا الزام ہے کہ اس علاقہ میں قبرستان میں قبور کی زیارت بھی مشکل ہوگئی ہے۔ ذرائع کے مطابق اس سلسلے میں تلنگانہ وقف بورڈ میں شکایت بھی کی گئی تاہم اس کا کوئی نتیجہ نہیں آیا۔ متاثرین و مقامی عوام نے بتایا کہ اگر وقف بورڈ کے عہدیداروں نے بروقت و موثر کارروائی انجام دیں تو اس اراضی کا تحفظ کیا جاسکتا ہے چونکہ علاقہ کے لحاظ سے قبرستان کی بقاء ضروری ہے اور بچوں کے قبرستان سے مشہور ہے۔ عوام نے وقف بورڈ کے صدرنشین کی کارکردگی سے متاثر ہوکر صدرنشین بورڈ سے کافی اُمیدوں کو وابستہ کیا ہے اور درخواست کی ہے کہ وہ قبرستان کے تحفظ کو یقینی بنانے کے اقدام کریں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT