Saturday , November 18 2017
Home / ہندوستان / بڑے جانوروں کی اسمگلنگ کا نیا موڑ

بڑے جانوروں کی اسمگلنگ کا نیا موڑ

جئے پور ۔ 3 ۔ جون : ( سیاست ڈاٹ کام) : راجستھان کے ضلع پرتاپ گڑھ میں ہندو تنظیموں کے بعض کارکنوں نے ایک ٹرک کا تعاقب کر کے بڑے جانوروں کی منتقلی کو ناکام بنادیا اور بیف کے 3 تاجروں پر حملہ کردیا ۔ تاہم پولیس نے تاجروں کو حملہ آوروں کے چنگل بچالیا اور مویشیوں کی اسمگلنگ کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا ۔ جب کہ ہندو تنظیموں بجرنگ دل اور شیوسینا کے 250 حامیوں کے خلاف ایک اور علحدہ کیس درج کرلیا گیا ۔ ایس ایچ او چھوٹی سدادی پولیس اسٹیشن مسٹر کیلاش چندرا نے بتایا کہ یہ واقعہ 31 مئی کو اس وقت پیش آیا جب شیوسینا اور بجرنگ دل کے کارکنان نماہیڈا سے آنے والے ایک ٹرک کا تعاقب کیا اور ٹرک میں 52 مویشی نظر آنے پر 3 افراد کو زد و کوب کا نشانہ بنایا جو کہ اس ٹرک میں سوار تھے ۔ قریب میں واقع ایک گاؤ شالہ کو منتقلی کے دوران 4 مویشی ہلاک ہونے پر کارکنوں نے حالت برہمی میں ٹرک کو آگ لگادی ۔ جب کہ باقیماندہ 48 جانوروں کو گاؤ شالہ میں محفوظ کردیا گیا ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ مبینہ اسمگلرس کی راجندر چترویدی ، ڈرائیور منوہر کماوت اور دنیش کی حیثیت سے شناخت کی گئی ہے ۔ اگرچیکہ یہ لوگ جائے وقوع سے فراری کی کوشش کی لیکن کارکنوں نے انہیں پکڑ کر حملہ کا نشانہ بنایا ۔ تاہم پولیس نے مداخلت کر کے حملہ آوروں سے بچالیا اور گرفتار کر کے مقامی پولیس اسٹیشن منتقل کردیا گیا ۔ اگرچیکہ 250 افراد کے خلاف ایک علحدہ کیس درج کیا گیا ہے لیکن ایف آئی آر میں کسی کا نام نہیں لیا گیا ہے اور گرفتار 3 ملزمین کو عدالتی تحویل میں دیدیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT