Thursday , June 21 2018
Home / پاکستان / بگتی قتل کیس:مشرف کو شخصی حاضری سے استشنی دینے عدالت کا انکار

بگتی قتل کیس:مشرف کو شخصی حاضری سے استشنی دینے عدالت کا انکار

اسلام آباد 17 مارچ (سیاست ڈاٹ کام)ایک انسداد دہشت گردی عدالت نے پاکستان کے سابق فوجی سربراہ جنرل پرویز مشرف کی جانب سے داخل کردہ ایک درخواست کو مسترد کردیا جس میں موصوف نے خواہش کی تھی کہ بلوچ قائد اکبر خان بگتی قتل معاملہ میں انہیں (مشرف) عدالت میں شخصی حاضری سے ہمیشہ کیلئے استثنی دیا جائے ۔ کوئٹہ کی عدالت مشرف کے خلاف مقدمہ کی سماعت

اسلام آباد 17 مارچ (سیاست ڈاٹ کام)ایک انسداد دہشت گردی عدالت نے پاکستان کے سابق فوجی سربراہ جنرل پرویز مشرف کی جانب سے داخل کردہ ایک درخواست کو مسترد کردیا جس میں موصوف نے خواہش کی تھی کہ بلوچ قائد اکبر خان بگتی قتل معاملہ میں انہیں (مشرف) عدالت میں شخصی حاضری سے ہمیشہ کیلئے استثنی دیا جائے ۔ کوئٹہ کی عدالت مشرف کے خلاف مقدمہ کی سماعت کررہی ہے جہاں مشرف کے علاوہ دیگر کو بھی بگتی کے قتل میں مبینہ طور پر ملوث بتایا گیا ہے اور یہ اس وقت کی بات ہے جب 2006 ء میں مشرف کے دور حکومت میں ایک فوجی آپریشن کیا گیا تھا۔ عدالت نے آج 71 سالہ مشرف کو حاضر ہونے کا حکم دیا تھا لیکن وہ غیر حاضر رہے ۔ اُن کے وکیل نے بتایا کہ ان کے موکل سکیوریٹی اور صحت کی بنیاد پر عدالت میں حاضر نہیں ہوسکتے اور یہ خواہش کی کہ انہیں شخصی حاضری سے ہمیشہ کیلئے مستثنی قرار دیا جائے ۔ عدالت نے اس درخواست کو نا منظور کرتے ہوئے مشرف کی صحت کا مشاہدہ کرنے کیلئے ایک میڈیکل ٹیم تشکیل دینے کا حکم دیا اور ساتھ ہی ساتھ موجودہ حکومت کو ہدایت کی کہ وہ مشرف کو مناسب سکیوریٹی بھی فراہم کرے ۔ عدالت نے مشرف کی غیر حاضری صرف آج کیلئے منظور کرتے ہوئے سماعت کی آئندہ تاریخ 8 اپریل مقرر کی۔

TOPPOPULARRECENT