Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / ’’بھارت ماتا کی سپوتوں کے خون اور پسینہ سے تاج محل کی تعمیر‘‘

’’بھارت ماتا کی سپوتوں کے خون اور پسینہ سے تاج محل کی تعمیر‘‘

ساری دنیا میں مشہور تاریخی یادگار کی حفاظت حکومت اترپردیش کی ذمہ داری : آدتیہ ناتھ
گورکھپور / لکھنؤ 17 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا ہے کہ ’’بھارت ماں کے سپوتوں‘‘ کے خون اور پسینہ سے تاج محل بنایا گیا ہے اور اس کی حفاظت حکومت اترپردیش کی ذمہ داری ہے۔ اُنھوں نے اعلان کیاکہ سیاحتی اسکیم کا جائزہ لینے کیلئے وہ آئندہ ہفتہ آگرہ کا دورہ کریں گے اور کہاکہ اس بات سے قطع نظر کہ کس شہنشاہ نے تاج محل بنایا ہے، یہ ایک تاریخی یادگار ہے۔ آدتیہ ناتھ کے ان تبصروں سے ایک دن قبل ان کے ایک ساتھی اور بی جے پی کے رکن اسمبلی سنگیت سوم نے ہندوستان کے یادگار ورثے میں تاج محل کی موجودگی پر سوال اُٹھایا تھا اور کہا تھا کہ تاریخ سے مغل شہنشاہوں کا نام و نشان مٹانے کے لئے دوبارہ تاریخ لکھی جائے گی۔ چیف منسٹر نے گورکھپور میں کہاکہ ’’یہ بحث نہیں ہے کہ تاج محل کو کس نے کیسے بنایا ہے… یہ (تاج محل) بھارت ماتا کے سپوتوں کے خون پسینہ سے بنا ہے۔ یہ اپنے تعمیری فن کے اعتبار سے دنیا بھر میں مشہور و معروف ہے۔ یہ ایک تاریخی یادگار ہے اس کی حفاظت نیز سیاحت کے لئے اس کا مزید فروغ حکومت اترپردیش کی ذمہ داری ہے‘‘۔ آدتیہ ناتھ نے اعلان کیاکہ وہ 26 اکٹوبر کو آگرہ کا دورہ کریں گے اور اس شہر کے لئے 370 کروڑ روپئے کے کاموں کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT