بھوپال :اسٹرانگ روم میں ایک گھنٹے تک سی سی کیمرے بند رہے

الیکشن کمیشن کا اعتراف ‘ اچانک برقی منقطع ہوگئی ۔ اضافی اسکرین اور جنریٹر کی تنصیب
نئی دہلی 2 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) الیکشن کمیشن نے یہ اعتراف کیا ہے کہ بھوپال کے اسٹرانگ روم میں جہاں الیکٹرانک وونگ مشین مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات کے بعد بحفاظت رکھے گئے ہیں سی سی ٹی وی کیمروں نے تقریبا ایک گھنٹہ کام نہیں کیا ہے کیونکہ جمعہ کے دن اچانک غیر متوقع طور پر وہاں برقی منقطع ہوگئی تھی ۔ یہ الزامات عائد کئے جا رہے ہیں کہ بی جے پی نے وہاں مشینوں میںچھیڑ چھاڑ کی ہے ۔ الیکشن کمیشن نے مزید کہا کہ اس نے ساگر کے مقام پر اس عہدیدار کے خلاف بھی کارروائی کی ہے جس نے ووٹنگ مشینوں کی حوالگی میں دو دن کی تاخیر کی ہے ۔ یہ ووٹنگ مشین 28 نومبر کو پولنگ کے فوری بعد حوالے کئے جانے چاہئے تھے ۔ کمیشن نے کہا کہ بھوپال کلکٹر سے حاصل کردہ ایک رپورٹ کے بموجب جمعہ 30 نومبر کو اسٹرانگ روم کے باہر رکھا گیا ایل ای ڈی ڈسپلے صبح 8.19 بجے سے 9.35 بجے تک بند تھا کیونکہ وہاں برقی سربراہی منقطع ہوگئی تھی ۔ اس کے نتیجہ میں اس وقت کی کوئی ریکارڈنگ نہیں کی جاسکی ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ایک اضافی ایل ای ڈی اسکرین ‘ ایک انورٹر اور ایک جنریٹر بھی وہاں نصب کردیا گیا ہے تاکہ بلا رکاوٹ برقی سربراہی کو یقینی بنایا جاسکے ۔

TOPPOPULARRECENT