Monday , December 18 2017
Home / ہندوستان / بہادر شاہ ظفر کی باقیات رنگون سے واپس لانے کا مطالبہ

بہادر شاہ ظفر کی باقیات رنگون سے واپس لانے کا مطالبہ

نئی دہلی،10مئی(سیاست ڈاٹ کام) سوشلسٹ پارٹی نے 1857ء انقلاب کے 160سال پورے ہونے کے موقع پر اس کی قیادت کرنے والے بہادر شاہ ظفر کی باقیات رنگون سے واپس لائے جانے کا حکومت سے مطالبہ کیا ہے ۔پارٹی کے صدر ڈاکٹر پریم سنگھ نے آج یہاں جاری ایک بیان میں کہا کہ ہندوستان کے جانباز فوجیوں نے 10 مئی 1857 کو میرٹھ میں برطانوی حکومت کے خلاف بغاوت کا آغاز کیاتھا۔ ملک کو غلامی کی زنجیروں سے آزاد کرانے کے مقصد سے وہ میرٹھ سے 10 مئی کو نکل کر 11 مئی کو دہلی پہنچے اور بادشاہ بہادر شاہ ظفر سے آزادی کی جنگ کی قیادت کرنے کی درخواست کی۔ بادشاہ نے فوجیوں اور ان کے ساتھ آئے شہریوں کی پیشکش کی قدر کی اور 82 سال کی عمر میں آزادی کی پہلی جنگ کی قیادت قبول کی۔ کئی وجوہات سے فوجی وہ جنگ جیت نہیں پائے ۔ انگریزوں نے بادشاہ پر فوجی عدالت میں مقدمہ چلایا اور اکتوبر 1858 میں انہیں قید کرکے دہلی سے رنگون بھیج دیا۔ وہاں 7 نومبر 1862 کو 87 سال کی عمر میں ان کا انتقال ہوا اور وہیں ان کی تدفین ہوئی۔
نوٹ بندی کی تفصیلات بتانے سے ریزرو بینک کا انکار
نئی دہلی۔ 10 مئی (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے نوٹ بندی کا اعلان کئے چھ ماہ بعد آر بی آئی نے اس سارے عمل کی تفصیلات بتانے سے یہ کہتے ہوئے انکار کردیا کہ ایسا کوئی بھی قدم ملک کے معاشی مفاد میں نہیں ہوگا۔ آر ٹی آئی سوال کا جواب دیتے ہوئے بینک نے کہا کہ ان تفصیلات کا انکشاف کرنے سے مستقبل کی معیشت یا حکومت ہند کی مالی پالیسیوں پر اثر پڑے گا۔ آر ٹی آئی کے ذریعہ ریزرو بینک 500 اور 1000 روپئے کی کرنسی کا چلن بند کرنے کے مقصد سے منعقدہ اجلاس کی تمام تفصیلات طلب کی گئی تھیں۔

TOPPOPULARRECENT