Wednesday , December 12 2018

بہار اسمبلی میں جے ڈی یو اور آر جے ڈی ارکان کی ہاتھا پائی

پٹنہ، 28 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بہار اسمبلی میں آج دوپہر کے وقفہ کے لئے کارروائی ملتوی ہونے کے فورا بعد ایوان کے اندر ہی حکمراں جنتا دل یونائٹیڈ (جے ڈی یو) کے وریندر کمار سنگھ اور راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے بھائی ویریندر آپس میں لڑگئے اور دونوں کے درمیان ہاتھا پائی کی نوبت آ گئی۔ اسمبلی میں دوپہر کے وقفے کے لئے ایوان کی کارروائی ملتوی ہونے کے بعد جب اسپیکر وجے کمار چودھری سمیت زیادہ تر اراکین ایوان سے باہر چلے گئے تھے ، تو آر جے ڈی کے بھائی ویریندر اور جے ڈی یو کے وریندر کمار سنگھ کی کسی بات پر تو – تو میں – میں شروع ہو گئی اور دیکھتے ہی دیکھتے ہاتھا پائی تک نوبت پہنچ گئی۔دونوں اراکین نے ایک دوسرے کو سبق سکھانے کی دھمکی اور بھدی-بھدی گالیاں بھی دیں۔ ایوان میں اس وقت موجود کچھ ارکان نے بیچ بچاؤ کر بھائی ویریندر اور وریندر سنگھ کو الگ کیا۔ بعد میں آر جے ڈی اراکین اسمبلی نے حزب اختلاف کے لیڈر کے ساتھ اسپیکر وجے کمار چودھری سے وریندرسنگھ کے خلاف شکایت کی اور ان پر کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا۔آر جے ڈی کے بھائی ویریندر نے صحافیوں سے بات چیت میں کہا کہ وریندر سنگھ نے انہیں گالیاں دیں ، جس پر انہوں نے کافی تحمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے کچھ نہیں کیا۔ وریندر سنگھ کے خلاف اسمبلی کے اسپیکر کو کارروائی کرنی چاہئے ۔ آر جے ڈی حزب اقتدار کے لیڈروں کی اس طرح کی حرکتوں کو برداشت نہیں کرے گا۔

TOPPOPULARRECENT