Saturday , November 25 2017
Home / سیاسیات / بہار شکست کی ذمہ داری عائد کرنے سے فرار نہ ہوا جائے

بہار شکست کی ذمہ داری عائد کرنے سے فرار نہ ہوا جائے

ایل کے اڈوانی ‘ منوہر جوشی اور دوسروں کی رائے کا خیر مقدم : شتروگھن سنہا کا بیان
نئی دہلی 12 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ایل کے اڈوانی اور مرلی منوہر جوشی کے بشمول پارٹی کے سینئر قائدین کے بیانات کا خیر مقدم کرتے ہوئے بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ شتروگھن سنہا نے آج کہا کہ پارٹی کو بہار انتخابات کی شکست کی ذمہ داری کا تعین کرنے سے فرار نہیں ہونا چاہئے ۔ سینئر قائدین نے بھی کل بیان جاری کرتے ہوئے مطالبہ کیا تھا کہ بہار میںشکست کے ذمہ دار قائدین کو جوابدہ بنانے کی ضرورت ہے ۔ شتروگھن سنہا نے اپنے ٹوئیٹر پر کہا کہ اب جبکہ بہار کا فیصلہ سامنے آگیا ہے اور ہمیں پارٹی کی بدترین شکست پر افسوس ہے ہم کو پارٹی میں ذمہ داری کا تعین کرنے سے شرمانا نہیں چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ ہم اپنے دوست ‘ فلاسفر ‘ گرو اور رہنما ( اڈوانی ) اور ان کے ساتھیوں کی ٹیم کے پیچھے چلیں۔ اب اس دوڑ کا آعاز ہوگیا ہے اور چاروں قائدین نے جو رائے ظاہر کی ہے وہ بالکل درست ہے ۔ پارٹی کے سینئر قائدین ایل کے اڈوانی ‘ مرلی منوہر جوشی ‘ شانتا کمار اور یشونت سنہا نے بہار میں اسمبلی انتخابات کی شکست کے پیش نظر وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف علم بغاوت بلند کیا تھا ۔ ان چاروں قائدین کا کہنا تھا کہ گذشتہ ایک سال کے دوران پارٹی کی مقبولیت میں گراوٹ آتی جا رہی ہے اور پارٹی کو صرف مٹھی بھر افراد کے پیچھے چلنے پر مجبور کردیا گیا ہے ۔ سینئر قائدین نے مطالبہ کیا تھا کہ بہار کے نتائج کا تفصیلی جائزہ لیا جانا چاہئے ۔ شتروگھن سنہا نے آج یہ بھی واضح کیا کہ انہوں نے کبھی یہ نہیں کہا کہ اگر انہیں چیف منسٹر امیدوار کے طور پر پیش کیا جاتا تو نتائج مختلف ہوتے ۔

TOPPOPULARRECENT