Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / بہار میں اغوا کی وارداتیں گھریلو صنعت میں تبدیل : مودی

بہار میں اغوا کی وارداتیں گھریلو صنعت میں تبدیل : مودی

سہسرام؍ اورنگ آباد،9 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) بہار میں ’جنگل راج‘ کا غلبہ قائم ہوجانے کا الزام عائد کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے آج عوام کو خبردار کیا ہے کہ اگر ’عظیم اتحاد‘ کو پھر ایک بار برسراقتدار لایا گیا تو اس ریاست کے معاملات میں لالو پرساد ’ریموٹ کنٹرول‘ بن جائیں گے اور اغوا برائے زر تاوان ’گھریلو صنعت‘ کی شکل اختیار کرجائے گی۔ بہار میں 12اکٹوبر سے شروع ہونے والے اسمبلی انتخابات کیلئے سہسرام اور اورنگ آباد میں عام جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے چیف منسٹر نتیش کمار، آر جے ڈی سربراہ لالو پرساد اور صدر کانگریس سونیا گاندھی کو گزشتہ 60سال کے دوران اپنی کارکردگی کا حساب کتاب پیش نہ کرنے پر تنقید کا نشانہ بنایا اور بتایا کہ انتخابی مہم کے دوران ان لیڈروں کے پاس ان ( مودی) کے خلاف لن ترانی کے سوا کچھ بھی نہیں ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ لالو پرساد کی یہ خواہش ہے کہ ریموٹ کنٹرول کی طرح بہار پر حکمرانی کریں کیونکہ وہ انتخابات میں مقابلہ کرنے سے قاصر ہیں لیکن وہ ’بگ باس‘ بن گئے ہیں اور وہ اپنی آواز پر بعض لوگوں  کو  نچا سکتے ہیں۔ انہوں نے عوام کو یاددہانی کروائی کہ لالو یادو کو چارہ اسکام میں سزائے قید ہوئی ہے جس کے نتیجہ میں وہ انتخابات میں مقابلہ کرنے کے اہل نہیں ہیں۔

اورنگ آباد میں ایک اور انتخابی ریالی سے خطاب میں وزیراعظم  مودی نے عظیم اتحاد ( جنتا دل متحدہ، آر جے ڈی اور کانگریس ) پر تنقیدوں کے تیر برسانے اور جنگل راج سے متعلق ان کے تبصرہ پر نتیش کمار کے اعتراض کو مضحکہ خیز قرار دیا جبکہ یہ ریمارک لالو یادو سے منسوب کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ہم جب بھی جنگل راج کی بات کرتے ہیں تو لالو یادو کی بجائے نتیش کمار کو غصہ آجاتا ہے جبکہ نتیش کمار نے خود کبھی لالو یادو کی حکمرانی کو جنگل راج سے تعبیر کیا تھا لیکن اب وہ خود اس پر اعتراض جتارہے ہیں۔ وزیر اعظم نے عوام سے دریافت کیا کہ آیا بہار میں پھر ایک بار جنگل راج کی ضرورت ہے۔ جنگل راج کے معنی اغوا کے واقعات ایک صنعت کی شکل اختیار کرجائیں گے۔ نئی موٹر کاریں چھین لی جائیں گی، غریبوں کے مکانات پر قبضہ کرلیا جائے گا۔

بہار میں کیا اس طرح کے دنوں کا احیاء چاہتے ہیں؟ ریاست میں بہتر حکمرانی سے متعلق نتیش کمار کے وعدہ پر تنقید کرتے ہوئے وزیر اعظم نے جنتا دل متحدہ اور آر جے ڈی کے اتحاد کے بعد سے ریاست میں پیش آئے جرائم کے اعداد و شمار پیش کئے اور کہا کہ جب سے نتیش کمار اور لالو یادو میں اتحاد ہوا ہے، جنوری اور جولائی کے دوران 4000 اغوا کی وارداتیں پیش آئیں حتیٰ کہ پٹنہ میں گزشتہ رات ایک پولیس عہدیدار کو گولی مار دی گئی، جس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ ریاست میں پولیس عہدیدار تک صحیح طور پر سلامت نہیں ہیں تو عام آدمی کیسے محفوظ رہ سکتے ہیں، اور یہ جنگل راج اسی وقت شروع ہوگیا جب یہ دونوں قائدین ( نتیش اور لالو ) باہم متحد ہوگئے۔وزیر اعظم نے کہا کہ وہ یہ سوچ کر فکرمند ہوجاتے ہیں کہ اگر ’عظیم اتحاد‘ پھر ایک بار اقتدارمیں آگیا تو بہار کا حشر کیا ہوگا؟ انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ بہار کو تباہی سے بچانے کیلئے لالو۔ نتیش اتحاد کو شکست دیں۔

TOPPOPULARRECENT