Thursday , December 14 2017
Home / سیاسیات / بہار میں صدر راج نافذ کرنے بی جے پی کا مطالبہ لوک سبھا میں جنتادل متحدہ اور آر جے ڈی کا احتجاج

بہار میں صدر راج نافذ کرنے بی جے پی کا مطالبہ لوک سبھا میں جنتادل متحدہ اور آر جے ڈی کا احتجاج

نئی دہلی ۔ 9 ۔ مئی : ( سیاست ڈاٹ کام): لوک سبھا میں آج بی جے پی ارکان نے بہار میں جنگل راج کا الزام عائد کرتے ہوئے فی الفور صدر راج نافذ کرنے کا مطالبہ کیا جب کہ اس مطالبہ کی مخالفت پر آر جے ڈی اور جے ڈی ( یو ) کے ساتھ ان کی بحث و تکرار ہوگئی ۔ وقفہ صفر کے دوران ریاست میں امن و قانون کا مسئلہ اٹھاتے ہوئے بی جے پی رکن پارلیمنٹ جناردھن سنگھ سیگروال نے الزام عائد کیا کہ حکمران اتحاد کے ارکان مقننہ یا ان کے رشتہ دار حالیہ دنوں میں مجرمانہ سرگرمیوں ملوث پائے گئے ۔ انہوں نے عصمت ریزی اور خواتین کے ساتھ بدسلوکی کے واقعات میں جنتادل متحدہ ۔ آر جے ڈی مقننہ ارکان کے ملوث ہونے کا تذکرہ کرتے ہوئے یہ مطالبہ کیا کہ ایک مرکزی ٹیم ریاست کو روانہ کی جائے اور ریاست میں بگڑتی نظم و ضبط کی صورتحال کے پیش نظر صدر راج کے نفاذ کا مطالبہ کیا ۔ بہار سے وابستہ بی جے پی کے ایک اور ایم پی مسٹر اشونی کمار چوبے نے بتایا کہ بہار میں حالیہ پیش آئے واقعات سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ وہاں ’ جنگل راج ‘ چل رہا ہے اور امن و قانون کی صورتحال ابتر ہوگئی ہے ۔ اس بیان پر جئے پرکاش نارائن یادو ( آر جے ڈی ) اور کوشیلندر کمار ( جے ڈی یو ) نے شدید اعتراض کرتے ہوئے بحث و تکرار کرلی اورصدر راج کے نفاذ کے مطالبہ کے خلاف احتجاج کیا ۔ بہار کے حالات پر چیف منسٹر نتیش کمار اور آر جے ڈی سربراہ للو پرساد یادو کے خلاف طنز کرتے ہوئے آر جے ڈی سے معطل ایم پی راجیش رنجن نے کہا ایک لیڈر آئندہ وزیر اعظم بننے کا خواب دیکھ رہا ہے تو دوسرا لیڈر چیف منسٹر بننے کا خواب رکھتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT