Saturday , October 20 2018
Home / ہندوستان / بہار کے ٹیچرس اپنی نئی ذمہ داری سے ناخوش

بہار کے ٹیچرس اپنی نئی ذمہ داری سے ناخوش

ریاست میں کھلے عام رفع حاجت روکنے کیلئے عوام کو ترغیب دینے پر زور
پٹنہ ۔ 22 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بہار کے بعض اصلاع میں اسکول ٹیچرس کو دی گئی ہدایت سے تنازعہ پیدا ہوگیا ہے۔ ٹیچرس کو یہ ذمہ داری دی گئی ہے کہ وہ اپنے علاقہ میں کھلے عام رفع حاجت کرنے والوں کو روکیں اور اگر یہ لوگ ان کی بات نہ مانیں تو ان کو کھلے عام اس رفع حاجت کرتے ہوئے تصویر لے لیں۔ بلاک ایجوکیشن آفیسرس نے ٹیچرس سے کہا ہے کہ وہ مختلف وارڈس میں گشت لگائیں اور پنچایت علاقوں کا بھی دورہ کریں جہاں کہیں لوگوں کو صبح کے وقت کھلے عام رفع حاجت کرتے ہوئے دیکھیں تو انہیں روک دیں اور بیت الخلائوں کا استعمال کرنے پر زور دیں اگر وہ نہ سنیں تو ان کی تصاویر لے لیں۔ ان ٹیچرس کو پابند کیا گیا ہے کہ وہ اپنے پیشہ درس تدریس سے ہٹ کر صبح کے اوقات میں گائوں کی پدیاترا کریں اور لوگوں کو ترغیب دیں کہ وہ کھلے عام رفع حاجت نہ کریں بلکہ گھروں یا خاص جگہ پر بنائے گئے بیت الخلائوں کا استعمال کریں تاہم اس زائد ذمہ داری سے ٹیچرس خوش نہیں۔ یہاں ان کا کہنا ہے کہ یہ کام ان پر زائد بوجھ ہے کیوں کہ انہیں دیگر کئی کاموں کے لیے بھی استعمال کیا جاتا ہے جیسے مردم شماری، ووٹرلسٹ کی تیاری وغیرہ کے لیے وہ کام کرتے ہیں اب لوگوں کو کھلے عام رفع حاجت سے روکنا ان پر ایک غیر پیشہ ورانہ ضرب ہے۔

TOPPOPULARRECENT