Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / بہرہ پن، نظر نہ آنے والی معذوری، ڈاکٹر ساؤربھ گپتا کا لکچر

بہرہ پن، نظر نہ آنے والی معذوری، ڈاکٹر ساؤربھ گپتا کا لکچر

حیدرآباد 7 ڈسمبر ( ایجنسیز) اپولو ہاسپٹلس میں امراض کان، ناک و حلق ( ای این ٹی ) کے سرجن کنسلٹنٹ ساؤربھ گپتا نے آج کہا کہ قوت سماعت کو حواس خمسہ میں کلیدی حِس ہے جس سے محرومی نہ صرف دوسروں کو سننے اور سمجھنے کی صلاحیتوں کو متاثر کرتی ہے بلکہ خود متاثرہ شخص کی بول چال کی صلاحیتوں پر بھی منفی اثرات مرتب کرتی ہے ۔ پبلک گارڈن واکرس اسو سی ایشن ( پی جی ڈبلیو اے ) کے زیر اہتمام 230 ویں ماہانہ صحت و طبی لکچر دینے کے بعد ڈاکٹر ساؤربھ گپتا نے کہا کہ ’’ سماعت سے محرومی (بہرہ پن) ایک نظر نہ آنے والی معذوری ہے جو کسی کی شخصی صحت، خوشی و ترقی پر اس کے منفی اثرات واضح اور بالکل حقیقی ہوتے ہیں‘‘۔ڈاکٹر گپتا نے کہا کہ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) اور ہندوستان کے مختلف اداروں کے اعداد کے مطابق ہندوستان میں ہر 1000 بچوں میں چار بچے قوت سماعت سے محرومی کے ساتھ پیدا ہوتے ہیں۔ علاوہ ازیں بالغان میں بھی قوت سماعت سے محرومی کی شرح میں خطرناک حد تک اضافہ ہورہا ہے ۔ عالمی سطح پر 10 فیصد سے زائد عوام کسی نہ کسی طرح سماعت سے محرومی کے شکار ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT