Wednesday , June 20 2018
Home / اضلاع کی خبریں / بیدر میں محکمہ آبرسانی کی مجرمانہ غفلت سے عوام پریشان

بیدر میں محکمہ آبرسانی کی مجرمانہ غفلت سے عوام پریشان

بیدر ۔ 2جولائی(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بلدیہ بیدرکی پہلی جنرل باڈی میٹنگ بیدر کے رکن پارلیمنٹ مسٹر بھگونت راؤ کھوباکی صدارت میںمنعقد ہوئی ۔ شہ نشین پر صدر مجلس بلدیہ بیدر محترمہ فاطمہ انور ‘ کمشنر مسٹر جگدیش نائک اور نائب صدر مجلس بلدیہ براجمان تھے ۔ مجلس بلدیہ کی اس جنرل باڈی میٹنگ کے ایجنڈہ میں 33نکات رکھے گئے تھے ۔ سب سے پہلے ب یدر میں

بیدر ۔ 2جولائی(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بلدیہ بیدرکی پہلی جنرل باڈی میٹنگ بیدر کے رکن پارلیمنٹ مسٹر بھگونت راؤ کھوباکی صدارت میںمنعقد ہوئی ۔ شہ نشین پر صدر مجلس بلدیہ بیدر محترمہ فاطمہ انور ‘ کمشنر مسٹر جگدیش نائک اور نائب صدر مجلس بلدیہ براجمان تھے ۔ مجلس بلدیہ کی اس جنرل باڈی میٹنگ کے ایجنڈہ میں 33نکات رکھے گئے تھے ۔ سب سے پہلے ب یدر میں پینے کے پانی کی عدم سربراہی اور اس سلسلہ میں کرناٹک اور اربن واٹر سپلائی بورڈ کی مجرمانہ غفلت اور سازش کے باعث عوام کو پینے کے پانی جیسے بنیادی سہولت کی فراہمی میں ناکامی پرمجلس بلدیہ بیدر کے اجلاس میں ارکان بلدیہ کی جانب سے ہنگامہ آرائی ہوئی ۔ صدر مجلس بیدر جناب سید منصور احمد قادری انجنیئر رکن بلدیہ ‘ محمد جاوید احمد رکن بلدیہ ‘ محمد نبی قریشی رکن بلدیہ ‘ محمد عبدالعزیز ‘ منا بھائی ‘ مسٹر ایسایس مارٹن رکن بلدیہ فلومن رکن بلدیہ ‘محمد غوث رکن بلدیہ ‘ محمد عتیق رکن بلدیہ ‘ سنیل شیو آنندہ ٹھے‘ سید سعود رکن بلدیہ نے اپنی سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوے کہا کہ پینے کے پانی جیسی بنیادی سہولت میں اربن واٹر سپلائی بورڈ کی لاپرواہی نے شہریان کو موسم گرما میں پریشان کر کے رکھ دیا اور ہمیشہ ٹکنیکل خرابی اور دیگر بے بنیاد وجوہات بتاکر بیدر کی عوام کو بیوقوف بنایا گیا اور عوام کے غصہ کا سامنا ہم ارکان بلدیہ کو کرنا پڑا ۔ارکان بلدیہ بیدر نے صدر مجلس بلدیہ بیدر محترمہ فاطمہ انور کو اس ضمن میں سخت ایکشن لینے کی بات کہی ۔ کمشنر بلدیہ مسٹر جگدیش نائیک نے بتایا کہ محکمہ اربن واٹر سپلائی بورڈ کی جانب سے ٹیکنیکل مسائل کے باعث پینے کے پانی سپلائی پر اثرزور پڑا ہے ‘ مگر اس طرح سخت قدم کیلئے ڈپٹی کمشنر اور دیگر اعلیٰ عہدیداران سے بات کرتے ہوئے ان کے تمام باتوں کو سامنے رکھنے کے بعد محکمہ اربن واٹر سپلائی بورڈ کے اعلیٰ عہدیداران کو اختیار ہوگا کہ ان کے خلاف کیا کارروائی کی جائے ۔ جناب محمد غوث رکن بلدیہ بیدر نے مجلس بلدیہ بیدر کی تمام ملگیات کا کتنا کرایہ وصول کیا جارہا ہے اور جن افراد کے نام ملگیات ہیں اس فہرست میں ناموں کو تبدیلی کونسل اور صدر مجلس بلدیہ بیدر کے علم میں لائے بغیر کیا جارہا ہے جو سرسرغلط ہے ۔ اگر ایسا ہوتا رہے گا تو صدر بلدیہ اور ارکان بلدیہ خاموش نہیں بیٹھیں گے ۔ بلدیہ بیدر کی تمام دکانوں کی معہ کرایہ کے ساتھ تفصیل پیش کرنا ہوگا ۔ محمد جاوید رکن بلدیہ بیدر نے بتایا کہ تقریباً 6 ماہ سے شہریان بیدر کو پینے کے پانی کیلئے سنگین مسائل کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔ رکن پارلیمنٹ بیدر مسٹر بھگونت راؤ کھوبانے فوری طور پر محکمہ اربن واٹر سپلائی بورڈ کے عہدیدار کو شہ نشین کے قریب طلب کر کے بتایا کہ انسان کو سب سے ضروری بنیادی طور پر پانی اہم ہے ۔ پینے کے پانی کے ضمن میں خاموشی اختیار کرنا اور اپنے فرائض سے کوتاہی برتنا ایک اچھے آفیسر کی نشانی نہیں ہے ۔ پینے کے پانی کے اس سنگین مسئلہ کے حل کیلئے سنجیدگی سے جو ٹیکنیکی خرابی ہے اسے فوری طور پر درست کرتے ہوئے شہریان کو فوری پانی سپلائی کیا جائے ۔ انہوں نے ارکان بلدیہ بیدر کو تیقن دیا کہ ان کے اختیار میں شہریا کیلئے جو بھی اسکیمات اور ترقیاتی کام ہوں گے وہ پوری دلچسپی کے ساتھ کریں گے ۔ ترقیاتی کام ایک فرد سے نہیں بلکہ آپ تمام کا تعاون ترقی میں ضروری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 24×7 اوقات میں پینے کے پانی سپلائی شہریان کو نہایت ضروری ہے ‘ اس ضمن میں ہم سب کو متحدہ ہوکر کام کرنا ہوگا ۔ محترمہ فاطمہ انور صدر نشین بلدیہ بیدر نے محکمہ اربن واٹر سپلائی بورڈ کے عہدیدار کو نہایت ہی برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ پینے کے پانی کی سپلائی میں لاپرواہی محکمہ اربن واٹر سپلائی بورڈ کرتاہے اور الزام بلدیہ پر لگایا جاتا ہے ۔ آج ان غلطی قبول کریں اور پینے کے پانی کے اس سنگین مسئلہ کے حل کیلئے پوری دلچسپی کے ساتھ کام کرتے ہیں تو کریں ‘ اگر نہیں کرنا ہے تو اس کا متبادل ہم صرور طئے کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ واٹر سپلائی بورڈ کی لاپرواہی اور عدم دلچسپی نے انتہائی مجرمانہ طرز پر کام کیا ہے ۔اس ضمن میں اعلیٰ سطح پر شکایت کرتے ہوئے خاطی عہدیداران کے خلاف سخت ایکشن لیتے ہوئے انہیںمعطل یا تبادلہ کئے جانے کا مطالبہ کیا جائے گا اور ایسے خاطی عہدیداران کی جگہ ایماندار اور عوامی ہمدردی سے واقف عہدیداران کو ان کی جگہ پر لائے جانے کا بھی مطالبہ کیا جائے گا ۔ اس اجلاس میں پینے کے پانی کی سپلائی کیلئے مختلف مشورہ آئے کہ کنزیومر پوائنٹ بنایا جائے یا دیگر طرز پر پینے کا پانی سپلائی کیا جائے۔

TOPPOPULARRECENT