Friday , December 15 2017
Home / دنیا / بیروزگاری پر قابو پانے آسٹریلیا میں 457 ویزا پروگرام کالعدم

بیروزگاری پر قابو پانے آسٹریلیا میں 457 ویزا پروگرام کالعدم

ملبورن۔18 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلیا نے آج ان عارضی 95,000 بیرونی ورکرس کے ذریعہ استعمال کئے جانے والے ایک اہم ویزا پروگرام کو منسوخ کردیا جن میں اکثریت ہندوستانی ورکرس کی تھی تاکہ ملک میں بڑھتی ہوئی بے روزگاری پر قابو پایا جاسکے۔ اس پروگرام کو 457 ویزا کہا جاتا تھا جس کے ذریعہ ہنرمندی کے شعبہ میں کسی بھی بیرونی ورکر کو چار سال کی مدت تک ملازم رکھنے کی اس وقت اجازت تھی جب آسٹریلیائی ورکرس کی قلت ہو۔ اس موقع پر وزیراعظم مالکم ٹرئبل نے بھی ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ آسٹریلیا ایک امیگریشن ملک ہے لیکن اس حقیقت کو بھی جھٹلایا نہیں جاسکتا کہ اب آسٹریلیائی ملازمت کیلئے آسٹریلیائی شہری کا انتخاب کیا جائے گا اور انہیں ترجیح دی جائے گی، لہذا 457 ویزا پروگرام کو منسوخ کیا جارہا ہے جس کے ذریعہ آسٹریلیا میں عارضی طور پر بیرونی ورکرس کو لایا جاتا تھا۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ایک پھر ضروری ہے کہ457  ویزا برداروں میں اکثریت ہندوستانی شہریوں کی تھی جس کے بعد دوسرے نمبر پر یوکے اور تیسرے نمبر پر چین ہے۔ ٹرنبل نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ 457 ویزا کو اب آسٹریلیا میں ملازمت کا ضامن تصور نہیں کیا جائے گا کیونکہ اب تمام ملازمین صرف اور صرف آسٹریلیائی شہریوں کو ہی دی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا اب ہنرمندی والی ملازمتوں کے شعبہ میں پہلے آسٹریلیائی شہری والا موقف اختیار کرے گا۔ اے بی سی کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ سال 30 ستمبر تک آسٹریلیا میں 457 ویزا پروگرام کے تحت 95,757 بیرونی ورکرس تھے۔ 457 پروگرام کی جگہ اب کچھ تحدیدات کیساتھ دوسرا پروگرام متعارف کروایا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT