Monday , June 18 2018
Home / ہندوستان / بیرون ملک مقیم شہریوں کو حق رائے دہی کیلئے درخواست مفاد عامہ سپریم کورٹ میں مستر د

بیرون ملک مقیم شہریوں کو حق رائے دہی کیلئے درخواست مفاد عامہ سپریم کورٹ میں مستر د

نئی دہلی ۔ 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج ایک صحافی کی پیش کردہ درخواست مفاد عامہ کو مسترد کردیا جس میں خواہش کی گئی تھی کہ قانون شہریت میں کی ہوئی ترمیمات کو منسوخ کردیا جائے جن کی وجہ سے بیرون ملک مقیم ہندوستانی شہری حق رائے دہی سے محروم کئے جارہے ہیں۔ درخواست میں کہا گیا تھا کہ عوام کے بیرون ملک قیام کی وجہ سے ان کا حق رائے

نئی دہلی ۔ 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج ایک صحافی کی پیش کردہ درخواست مفاد عامہ کو مسترد کردیا جس میں خواہش کی گئی تھی کہ قانون شہریت میں کی ہوئی ترمیمات کو منسوخ کردیا جائے جن کی وجہ سے بیرون ملک مقیم ہندوستانی شہری حق رائے دہی سے محروم کئے جارہے ہیں۔ درخواست میں کہا گیا تھا کہ عوام کے بیرون ملک قیام کی وجہ سے ان کا حق رائے دہی تلف نہیں کیا جاسکتا۔ سپریم کورٹ کی ایک بنچ نے جو چیف جسٹس ایچ ایل دتو اور جسٹس ارون مشرا پر مشتمل تھی، کہا کہ درخواست رٹ جو عوام کی جانب سے پیش کی گئی ہے، جو بیرون ملک آرام دہ زندگی گذار رہے ہیں، موجودہ درخواست مفاد عامہ ان عوام کیلئے نہیں ہے بلکہ ان افراد کیلئے ہے جو عدالت سے ربط پیدا نہیں کرسکتے۔ انہوں نے جی وینکٹ راؤ مشیرقانونی برائے درخواست گذار صحافی سے کہا کہ اپ یہ نہیں کہہ سکتے کہ میں ان افراد کے حقوق سلب کررہا ہوں۔ بنچ نے سینئر صحافی ایس وینکٹ نارائن کے درخواست مفاد عامہ داخل کرنے پر بھی اعتراض کیا کیونکہ وہ خود متاثر نہیں ہوئے اور جو لوگ متاثر ہوئے انہوں نے سپریم کورٹ سے رجوع ہونے کی کوشش نہیں کی۔

TOPPOPULARRECENT