Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / بیرون ملک کمپنی قائم کرنے کا عمران خان اعتراف

بیرون ملک کمپنی قائم کرنے کا عمران خان اعتراف

برطانیہ کے محاصل سے بچنا اصل مقصد ۔ پی ٹی آئی سربراہ کا بیان ۔ سیاسی مخالفین کی سخت تنقید
اسلام آباد 14 مئی ( پی ٹی آئی ) پاکستانی تحریک انصاف پارٹی کے صدر نشین عمران خان نے اعتراف کیا کہ انہوں نے دو دہے قبل لندن میں فلیٹ خریدنے کے مقصد سے بیرونی ممالک میں ایک کمپنی قائم کی تھی تاکہ برطانوی محاصل سے بچا جاسکے ۔ ان کے اس اعتراف پر ان کے سیاسی مخالفین نے شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے اور اب تک ایسی کسی کمپنی سے انکار کرتے رہنے پر انہیں تنقید کا نشانہ بنایا ہے ۔ عمران خان نے ایک ڈرامائی اعتراف میں کہا کہ انہوں نے 1983 میں لندن میں ایک فلیٹ خریدنے بیرونی ملک میں ایک کمپنی قائم کی تھی جس کا مقصد برطانیہ کے محاصل بچانا تھا ۔ ایک دن قبل ہی ان کی پارٹی نے سرکاری طور پر اعلان کیا تھا کہ عمران خان ایسی کسی کمپنی کے مالک نہیں ہیں۔ عمران خان نے کل لندن کے ہیتھرو ائرپورٹ پر کہا کہ وہ لندن میں پہلے ہی اپنی آمدنی پر 35 فیصد ٹیکس ادا کر رہے تھے اور مزید ٹیکسیس سے بچنے کیلئے انہوں نے ایک بیرونی کمپنی کے ذریعہ وہاں ایک فلیٹ خریدا اور وہ میرا حق تھا کیونکہ میں برطانوی شہری نہیں تھا ۔ عمران خان نے یہ اعتراف ایسے وقت میں کیا ہے جب خود پاکستان میں وزیر اعظم نواز شریف پر مسلسل دباؤ ڈالا جا رہا ہے کہ پناما پیپرس میں ان کے افراد خاندان کا نام سامنے آنے کے بعد وہ اپنے عہدہ سے مستعفی ہوجائیں ۔ عمران خان کی پارٹی کے ترجمان نعیم الحق نے اعتراف کیا کہ ان کی پارٹی کے سربراہ کرکٹ سے ہونے والی اپنی آمدنی سے لندن میں ایک فلیٹ خریدنے ایک کمپنی قانونی طور پر قائم کی تھی ۔ وزیر دفاع پاکستان خواجہ آصف نے عمران خان پر ایسی کسی کمپنی کی ملکیت سے اب تک انکار پر شدید تنقید کی ہے ۔ وزیر اعظم نواز شریف کی دختر مریم نواز نے بھی عمران خان کو اپنے ٹوئیٹر پر تنقید کا نشانہ بنایا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT