Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / بیرون ممالک زیر تعلیم طلبہ کیلئے خوشخبری ، دوسرے سمسٹر کے طلبہ اسکالر شپس کے اہل

بیرون ممالک زیر تعلیم طلبہ کیلئے خوشخبری ، دوسرے سمسٹر کے طلبہ اسکالر شپس کے اہل

اوورسیز اسکالر شپ اسکیم کے دائرہ میں شامل ، پانچ لاکھ روپئے جاری کرنے حکومت کا فیصلہ
حیدرآباد۔/5مئی، ( سیاست نیوز) 5 بیرونی ممالک کی یونیورسٹیز میں زیر تعلیم اقلیتی طلباء کیلئے خوشخبری ہے کہ حکومت نے انہیں دوسرے سیمسٹر کیلئے اوورسیز اسکالر شپ اسکیم سے استفادہ کا موقع فراہم کیا ہے۔ اوورسیز اسکالر شپ اسکیم سے متعلق ریاستی سلیکشن کمیٹی نے ایسے طلباء کو اسکیم کے دائرہ میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو پہلے ہی سے بیرونی ممالک یونیورسٹیز میں زیر تعلیم ہیں اور انہوں نے پہلے سیمسٹر میں اسکیم کیلئے درخواست داخل نہیں کی۔ مختلف طلباء اور ان کے سرپرستوں کی جانب سے اس سلسلہ میں حکومت سے نمائندگی کی گئی تھی۔ سلیکشن کمیٹی کے صدرنشین و سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے بتایا کہ اجلاس میں طئے کیا گیا کہ دوسرے سیمسٹر میں زیر تعلیم اقلیتی طلباء کی درخواستوں کو قبول کیا جائے۔ انہیں صرف سیکنڈ سیمسٹر کیلئے ہی اسکالر شپ منظور کی جائے گی اور اس کے بعد مزید تعلیم جاری رکھنے پر اسکالر شپ حاصل نہیں ہوگی یعنی صرف ایک سال ہی ایسے طلباء کو اسکالر شپ کی رقم کے طور پر 5 لاکھ روپئے جاری کئے جائیں گے۔ اس سہولت سے کئی طلباء کو فائدہ ہوسکتا ہے۔ اسٹیٹ سلیکشن کمیٹی نے چیف منسٹرس اوورسیز اسکالر شپ اسکیم فار میناریٹیز کے دوسرے مرحلہ میں جملہ470 درخواستیں داخل کی گئی تھیں جن میں 225 طلباء کا انتخاب کیا ہے جن میں 208 کا تعلق مسلم اور 17کا تعلق عیسائی طبقہ سے ہے۔ منتخب طلباء میں 38 لڑکیاں ہیں جن میں 23مسلم اور 10کرسچین شامل ہیں۔ ان درخواستوں کی یکسوئی کا کام جاری ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ بعض مزید درخواستیں کمیٹی کے زیر غور ہیں۔ اوورسیز اسکالر شپ اسکیم کے پہلے مرحلہ میں210 طلباء کو اسکالر شپ منظور کی گئی اور مزید 29طلباء کو بعد میں اسکالر شپ کے دائرہ میں شامل کیا گیا۔ واضح رہے کہ اوورسیز اسکالر شپ اسکیم 5 ممالک کی یونیورسٹیز میں زیر تعلیم طلباء کیلئے قابل عمل ہے جن میں امریکہ، برطانیہ، کنیڈا، آسٹریلیا اور سنگاپور شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT