Friday , September 21 2018
Home / اضلاع کی خبریں / بیسٹ ٹیچر ایوارڈس کی تقسیم میں شفافیت ضروری

بیسٹ ٹیچر ایوارڈس کی تقسیم میں شفافیت ضروری

کورٹلہ /17 نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) جناب محمد حمیدالدین اسکول اسسٹنٹ اردو میڈیم رائیکل نے اردو اکیڈیمی حیدرآباد سے ملک کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابواکلام آزاد کی یوم پیدائش کے موقع پر دئے جانے والے بیسٹ ٹیچر ایوارڈ میں شفافیت پیدا کرنے کی اپیل کی ۔ انہوں نے کہا کہ مدرس کا پیشہ ہمارے سماج میں عزت و احترام کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے ۔ چ

کورٹلہ /17 نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) جناب محمد حمیدالدین اسکول اسسٹنٹ اردو میڈیم رائیکل نے اردو اکیڈیمی حیدرآباد سے ملک کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابواکلام آزاد کی یوم پیدائش کے موقع پر دئے جانے والے بیسٹ ٹیچر ایوارڈ میں شفافیت پیدا کرنے کی اپیل کی ۔ انہوں نے کہا کہ مدرس کا پیشہ ہمارے سماج میں عزت و احترام کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے ۔ چنانچہ اساتذہ کی پیشہ وارانہ ، نصابی اور سماجی سرگرمیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے اردو اکیڈیمی حیدرآباد کی جانب سے ہر سال مولانا ابواکلام آزاد کی یوم پیدائش کے موقع پر بیسٹ ٹیچر ایوارڈ سے نوازا جاتا ہے ۔ اردو اکیڈیمی کے عہدیدار ہر ضلع سے بیسٹ ٹیچر ایوارڈ کی تقسیم کے سلسلے میں اساتذہ سے درخواستیں طلب کرتے ہیں ۔ مگر بیسٹ ٹیچر ایوارڈ تقسیم کئے جاتے ہیں تو انہیں دیکھ کر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ اردو اکیڈیمی کے عہدیداروںنے ان درخواستوں کو پڑھنے کی زخمت بھی گوارہ کی ہے کہ نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ امسال جگتیال کے ایسے مدرس کو ایوارڈ سے نوازا گیا جن کا تقرر بحیثیت اسکول اسسٹنٹ 2009 میں ہوا اور جنہیں ڈسٹرکٹ بیسٹ ٹیچر ایوارڈ بھی نہیں ملا ۔ جبکہ ایسے اساتذہ جن کا تقرر بحیثیت اسکول اسسٹنٹ 1998 سے 2001 کے درمیان ہوا ہے اور جنہیں ڈسٹرکٹ بیسٹ ٹیچر ایوارڈ سے بھی نوازا گیا ۔ ایسے اساتذہ بالکل نظر انداز کردئے گئے ہیں ۔ سارے ایوارڈ ایک ہی مقام جگتیال پر ڈیوٹی انجام دینے والے اساتذہ کو دئے گئے ۔ انہوں نے کہا کہ کیا یہی انتخاب کی شفافیت ہے ؟ جناب حمیدالدین انور نے جناب محمد محمود علی ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ سے اردو اکیڈیمی حیدرآباد کی جانب سے بیسٹ ٹیچر ایوارڈ کی تقسیم مستحق و حقدار ٹیچروں کو بیسٹ ٹیچر ایوارڈ سے عطا کرنے کی اپیل کی ۔

TOPPOPULARRECENT